ہوم » نیوز » عالمی منظر

اسرائیل کے سابق وزیراعظم ایھود اولمرٹ کو جیل

سنگاپور۔ اسرائیل کے سابق وزیر اعظم ایهود اولمرٹ کو بدعنوانی اور انصاف کے عمل میں رکاوٹ ڈالنے کا مجرم پائے جانے کے بعد 19 ماہ کی جیل کی سزا سنائی گئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 16, 2016 04:57 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اسرائیل کے سابق وزیراعظم ایھود اولمرٹ کو جیل
سنگاپور۔ اسرائیل کے سابق وزیر اعظم ایهود اولمرٹ کو بدعنوانی اور انصاف کے عمل میں رکاوٹ ڈالنے کا مجرم پائے جانے کے بعد 19 ماہ کی جیل کی سزا سنائی گئی ہے۔

سنگاپور۔  اسرائیل کے سابق وزیر اعظم ایهود اولمرٹ کو بدعنوانی اور انصاف کے عمل میں رکاوٹ ڈالنے کا مجرم پائے جانے کے بعد 19 ماہ کی جیل کی سزا سنائی گئی ہے۔ مقامی اخبار کے مطابق اسرائیل کی تاریخ میں یہ پہلی بار ہوا ہے کہ کسی سابق وزیر اعظم کو جیل بھیجا گیا ہو۔ ستر سالہ اولمرٹ کو مارچ 2014 میں ملک کی سپریم کورٹ نے دارالحکومت يروشلم میں متنازعہ ریئل اسٹیٹ پروجیکٹ کو قائم کرنے کے لئے رشوت لینے کا قصوروار پایا تھا۔ سابق وزیر اعظم اولمرٹ کو پیر کو ماسياهو جیل لے جایا گیا وہ 2006 سے 2009 تک اسرائیل کے وزیر اعظم رہے ۔


ان پر الزام تھا کہ انہوں نے اپنے عہدے پر رہتے ہوئے رشوت خوری، جعل سازی اور سابق معاون کو اپنے خلاف گواہی سے روک کر انصاف کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کا جرم کیا۔ مقامی میڈیا میں اولمرٹ کو جیل لے جاتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ جیل جانے سے پہلے انہوں نے ایک ویڈیو بھی جاری کیا، جس میں انہوں نے خود کو بے قصور بتایا ہے۔اولمرٹ نے کہا، ’’اس وقت میں صرف اتنا ہی کہنا چاہوں گا کہ میں اپنے اوپر لگے تمام الزامات کو مسترد کرتا ہوں۔ ایک وزیر اعظم کی حیثیت سے میری ذمہ داری اپنے ملک کی حفاظت کرنا تھی، لیکن اس وقت میں جیل جا رہا ہوں۔ آپ سمجھ سکتے ہیں کہ حالات اس وقت میرے خلاف ہیں۔ 


اولمرٹ نے اعتراف کیا کہ ان سے غلطی ہوئی ہے، لیکن وہ مجرم نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا، ’’میں سزا قبول کرتا ہوں کیونکہ قانون کی نظر میں سب برابر ہیں۔‘‘ مقامی اخبار نے جیل ترجمان کے حوالے سے بتایا کہ اولمرٹ کو بلاک -10 میں رکھا جائے گا۔ اس جگہ ان لوگوں کو رکھا جاتا ہے جنہیں دیگر قیدیوں کے ساتھ نہیں رکھا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ یہاں انھیں سبھی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔

First published: Feb 16, 2016 04:56 PM IST