உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    OmicronVarient: اومیکران پر ماہرین کی وارننگ، کہا- نیچرل ویکسین سمجھنا ہوگا بڑی بھول

    عام طور پر کورونا کے سب سے تیزی سے پھیلنے والے ویریئنٹ اومیکران (Omicron variant) میں اب تک سنگین علامات نہیں دکھائی دے رہے ہیں۔ اس بات کا لوگ غلط مطلب نکال رہے ہیں۔ کچھ لوگوں میں ایسی روایت بن گئی ہے کہ اومیکران کے انفیکشن (Infection) ہونے سے فائدہ ہے کیونکہ یہ نیچلر ویکسین کی طرح کام کرے گا۔

    عام طور پر کورونا کے سب سے تیزی سے پھیلنے والے ویریئنٹ اومیکران (Omicron variant) میں اب تک سنگین علامات نہیں دکھائی دے رہے ہیں۔ اس بات کا لوگ غلط مطلب نکال رہے ہیں۔ کچھ لوگوں میں ایسی روایت بن گئی ہے کہ اومیکران کے انفیکشن (Infection) ہونے سے فائدہ ہے کیونکہ یہ نیچلر ویکسین کی طرح کام کرے گا۔

    عام طور پر کورونا کے سب سے تیزی سے پھیلنے والے ویریئنٹ اومیکران (Omicron variant) میں اب تک سنگین علامات نہیں دکھائی دے رہے ہیں۔ اس بات کا لوگ غلط مطلب نکال رہے ہیں۔ کچھ لوگوں میں ایسی روایت بن گئی ہے کہ اومیکران کے انفیکشن (Infection) ہونے سے فائدہ ہے کیونکہ یہ نیچلر ویکسین کی طرح کام کرے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: عام طور پر کورونا کے سب سے تیزی سے پھیلنے والے ویریئنٹ اومیکران (Omicron variant) میں اب تک سنگین علامات نہیں دکھائی دے رہے ہیں۔ اس بات کا لوگ غلط مطلب نکال رہے ہیں۔ کچھ لوگوں میں ایسا مفروضہ بن گیا ہے کہ اومیکران کا انفیکشن (Infection) ہونے سے فائدہ ہے کیونکہ یہ نیچلر ویکسین کی طرح کام کرے گا۔ حالانکہ ماہرین نے اس پر سخت اعتراض درج کیا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اومیکران کو نیچرل ویکسین (Natural Vaccine) سمجھنے کا مفروضہ خطرناک خیال ہے۔ اس طرح کی بات کو ایسے غیر ذمہ دار لوگ پھیلا رہے ہیں، جو کووڈ-19 (Covid-19) کے بعد ہونے والی صحت سے متعلق طویل مدتی مشکلات پر غور نہیں کرتے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ بے شک کورونا وائرس کے دیگر فارمیٹ کے مقابلے اومیکران نسبتاً کم سنگین ہیں، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ اسے نیچرل ویکسین سمجھا جائے۔

      مہاراشٹر کے ایک طبی افسر نے بھی حال میں دعویٰ کیا تھا کہ اومیکران ایک قدرتی ویکسین کی طرح کام کرے گا اور اس سے کووڈ-19 کو مقامی وبا (اینڈیمک) کے مرحلے میں جانے میں مدد مل سکتی ہے۔ مشہور وائرولوجسٹ شاہد جمیل  (shahid jameel) نے کہا کہ اومیکران کو ایک قدرتی ٹیکہ ماننے والا مفروضہ ایک خطرناک خیال ہے، جسے غیر ذمہ دار لوگ پھیلا رہے ہیں۔

      جنہیں جانکاری نہیں وہی پھیلا رہے ہیں یہ بات

      شاہد جمیل نے کہا، اس مفروضہ سے بس ایک اطمینان ملتا ہے، لیکن اس کی وجہ اس وقت دستیاب ثبوتوں کے بجائے عالمی وبا کے سبب پیدا ہوئی پریشانی کو مزید بڑھانا ہے۔ شاہد جمیل نے کہا کہ جو لوگ اس مفروضے کی وکالت کرتے ہیں، وہ کورونا وائرس انفیکشن کے بعد صحت پر پڑنے والے طویل مدتی اثرات پر غور نہیں کرتے اور انہیں اس بارے میں زیادہ جانکاری نہیں ہے۔

      پبلک ہیلتھ فاونڈیشن آف انڈیا میں لائف کورس ایپیڈیمولوجی کے سربراہ گریدھر آر بابو نے کہا کہ اومیکران کے علامات کتنی ہی معمولی کیوں نہ ہوں، یہ ویکسین نہیں ہے۔ انہوں نے کہا، اس فارمیٹ کے سبب لوگوں کو اسپتال میں داخل ہونا پڑ رہا ہے اور ان کی موت بھی ہو رہی ہے۔ غلط اطلاع سے دور رہیں۔ کوئی بھی قدرتی انفیکشن ٹیکہ کاری کی طرح کسی بھی فارمیٹ (الفا، بیٹا، گاما یا ڈلٹا) سے لوگوں کی (موت یا سنگین انفیکشن سے) حفاظت نہیں کرسکتا۔ ثبوت معانی رکھتے ہیں، رائے نہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: