உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Foreigners: سال 2020 میں ویزہ کی میعاد ختم ہونے کے بعد بھی 40,000 سے زیادہ غیر ملکی ہندوستان میں مقیم

    کورونا وبا پھیلنے کے بعد ہندوستان جانے والے غیر ملکیوں پر بھی ویزا پابندیاں تھیں۔

    کورونا وبا پھیلنے کے بعد ہندوستان جانے والے غیر ملکیوں پر بھی ویزا پابندیاں تھیں۔

    ہندوستان سے بین الاقوامی مقامات کے لیے طے شدہ بین الاقوامی پروازیں 25 مارچ 2020 سے 27 مارچ 2022 تک دو سال کے لیے معطل رہیں۔ تاہم اس مدت کے دوران بین الاقوامی پروازیں صرف "air bubble" کے انتظامات کے تحت چلائی گئیں۔

    • Share this:
      سال 2020 میں اپنے ویزوں کی میعاد ختم ہونے کے بعد 40,000 سے زیادہ غیر ملکی ہندوستان میں مقیم رہے۔ عالمی وبا کورونا وبا (COVID-19) کی وجہ سے ملک گیر لاک ڈاؤن کے طویل دور کے باوجود 32.79 لاکھ سے زیادہ غیر ملکیوں نے ملک کا دورہ کیا۔ مرکزی وزارت داخلہ (Union Home Ministry) کے اعدادوشمار کے مطابق 2019 میں اپنے ویزا کی میعاد ختم ہونے کے بعد ملک میں مقیم غیر ملکی شہریوں کی تعداد 54,576 تھی اور 2020 میں یہ تعداد 40,239 ہوئی ہے۔

      حکام نے کہا کہ ویزہ کی تاریخ سے زیادہ ہندوستان میں قیام کرنے پر جرمانہ، پانچ سال تک کی قید اور دوبارہ ملک میں داخلے پر پابندی لگ سکتی ہے۔ ہندوستان میں پہلے 15 دنوں میں زیادہ قیام کرنے پر جرمانہ صفر ہے، اگر یہ 16 دن سے 30 دن تک ہے تو 10,000 روپے، 31 دن سے 90 دن تک رہنے پر 20,000 روپے اور 90 دنوں سے زیادہ رہنے پر 50,000 روپے جرمانہ ہے۔

      یکم اپریل 2020 سے 31 دسمبر 2020 کے درمیان کل 32,79,315 غیر ملکی شہریوں نے ہندوستان کا دورہ کیا۔ وزارت داخلہ کے اعداد و شمار کے مطابق اس عرصے کے دوران ہندوستان کا دورہ کرنے والے غیر ملکیوں کی سب سے زیادہ تعداد ریاستہائے متحدہ امریکہ سے ہیں، جن کی تعداد 61,190 ہے۔ اس کے بعد بنگلہ دیش (37,774)، برطانیہ (33,323)، کینیڈا (13,707)، پرتگال (11,668) اور افغانستان (11,212) کے شہری ہیں۔

      مذکورہ مدت کے دوران کل 8,438 جرمن شہری، 8,353 فرانسیسی شہری، 7,163 عراقی اور 6,129 جمہوریہ کوریا کے شہریوں نے بھی ہندوستان کا دورہ کیا۔ اس کے علاوہ 4,751 پاکستانی شہریوں نے 2020 میں ہندوستان کا دورہ کیا۔ 1 اپریل 2020 سے 31 دسمبر 2020 کے درمیان ان ممالک میں غیر ملکیوں کی کل آمد کا 71 فیصد سے زیادہ حصہ تھا جبکہ باقی ممالک کا حصہ تقریباً 29 فیصد تھا۔

      کورونا وائرس کی وجہ سے ملک گیر لاک ڈاؤن کا اعلان پہلی بار ہندوستان میں 25 مارچ سے 21 اپریل 2020 تک کیا گیا تھا اور اس میں تین بار 31 مئی 2020 تک توسیع کی گئی تھی۔ اگرچہ حکومت نے جون 2020 سے مختلف سرگرمیاں بتدریج دوبارہ کھولنے کا اعلان کیا تھا، لیکن اس دوران بھی بہت سی پابندیاں جاری رہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      چیف جسٹس آف انڈیا این وی رمنا کے بعد اگلے CJI کون؟ جسٹس ادے امیش للت کی سفارش

      ہندوستان سے بین الاقوامی مقامات کے لیے طے شدہ بین الاقوامی پروازیں 25 مارچ 2020 سے 27 مارچ 2022 تک دو سال کے لیے معطل رہیں۔ تاہم اس مدت کے دوران بین الاقوامی پروازیں صرف "air bubble" کے انتظامات کے تحت چلائی گئیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Covid-19: کورونا نے پھر بڑھائی تشویش، کیا آنے والی ہے نئی لہر؟ ماہرین نے کہی یہ بات

      کورونا وبا پھیلنے کے بعد ہندوستان جانے والے غیر ملکیوں پر بھی ویزا پابندیاں تھیں۔ تاہم کورونا پابندیوں کے بعد مرکزی حکومت نے ویزا جاری کرنا شروع کر دیا تھا اور مئی 2020 سے مرحلہ وار سفری پابندیاں واپس لے لی تھیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: