واہ رے پاکستان! بغیر کسی مسافر کے اڑا دئیے 82 طیارے، ہوا 18 کروڑ کا نقصان

حیرت کی بات یہ ہے کہ ان پروازوں کے علاوہ حج پر جانے والی تقریبا 36 پروازیں ایسی تھیں جن میں ایک بھی مسافر سوار نہیں تھا۔ رپورٹ کے مطابق، اس کی وجہ سے پی آئی اے کو 18 کروڑ روپئے کا بھاری نقصان ہوا ہے۔

Sep 21, 2019 11:29 AM IST | Updated on: Sep 21, 2019 11:30 AM IST
واہ رے پاکستان! بغیر کسی مسافر کے اڑا دئیے 82 طیارے، ہوا 18 کروڑ کا نقصان

پی آئی اے

پاکستان کے اقتصادی حالات تیزی سے خراب ہو رہے ہیں۔ پاکستان کے خراب ہوتے حالات کے درمیان اب ایک ایسا انکشاف ہوا ہے جس پر یقین کرنا تھوڑا مشکل ہے۔ جیو نیوز کے مطابق، ایک آڈٹ رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ پاکستان کی سرکاری طیارہ خدمات، پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنس ( پی آئی اے) پچھلے کچھ وقتوں سے بغیر کسی مسافر کے پرواز بھر رہی تھی۔ خاص بات یہ ہے کہ پی آئی اے کے طیارے ایک دو دن نہیں پورے 82 بار بغیر کسی مسافر کے اڑان بھر چکے ہیں۔ طیارہ کمپنی کی اس حرکت سے حکومت پاکستان کو 18 کروڑ روپئے کا نقصان ہوا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ قومی طیارہ خدمات نے اسلام آباد سے پرواز بھری اور ہوا میں ہی اپنے طیارے اڑانے کے بعد اسے واپس اسلام آباد میں ہی اتار دیا۔ پی آئی اے نے ایسا ایک دو بار نہیں بلکہ 82 بار کیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق، سال 2016 سے 2017 کے درمیان پی آئی اے نے ایسی 46 پروازیں بھریں جس میں ایک بھی مسافر سوار نہیں تھا۔

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان: فائل فوٹو پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان: فائل فوٹو

Loading...

حیرت کی بات یہ ہے کہ ان پروازوں کے علاوہ حج پر جانے والی تقریبا 36 پروازیں ایسی تھیں جن میں ایک بھی مسافر سوار نہیں تھا۔ رپورٹ کے مطابق، اس کی وجہ سے پی آئی اے کو 18 کروڑ روپئے کا بھاری نقصان ہوا ہے۔ اس معاملہ میں اب انتظامیہ کو اطلاع دینے کے بعد جانچ تیز کر دی گئی ہے۔

غور طلب ہے کہ پاکستان کا قرض 6 ارب ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔ موڈیز کے 39 مہینے کے معاہدے کے علاوہ دوسرے ملکوں سے لئے قرض اور اس کے سود کی ادائیگی کی وجہ سے غیر ملکی زر مبادلہ میں بھی گراوٹ آئی ہے۔ بڑھتے قرض کے سبب ملک کے معاشی حالات مزید کمزور ہوں گے۔

 

 

Loading...