ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان میں انسانی حقوق کے علمبردار اور بلاگ نویس خرم ذکی کا قتل

اسلام آباد۔ مسلح حملہ آوروں نے کل رات شمالی کراچی میں انسانی حقوق کے علمبردار اور بلاگ نویس خرم ذکی کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔

  • UNI
  • Last Updated: May 08, 2016 06:40 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
پاکستان میں انسانی حقوق کے علمبردار اور بلاگ نویس خرم ذکی کا قتل
اسلام آباد۔ مسلح حملہ آوروں نے کل رات شمالی کراچی میں انسانی حقوق کے علمبردار اور بلاگ نویس خرم ذکی کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔

اسلام آباد۔  مسلح حملہ آوروں نے کل رات شمالی کراچی میں انسانی حقوق کے علمبردار اور بلاگ نویس خرم ذکی کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔ سول سوسائٹی کے رہنما خرم ذکی پر دو موٹر سائیکلوں پر سوار چار نامعلوم مسلح حملہ آوروں نے نارتھ کراچی سیکٹر 11  میں ایک ہوٹل کے باہر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 3 افراد شدید زخمی ہوئے۔ واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس اور امدادی کارکنوں نے موقع پر پہنچ کر لاش اور زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا۔ جہاں ڈاکٹروں نے خرم ذکی کو مردہ قرار دے دیا، دیگر زخمیوں کو عباسی شہید ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق زخمیوں میں صحافی راؤ خالد اور ایک راہ گیر اسلم شامل ہیں۔


وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے سماجی رہنما خرم ذکی کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے انسپکٹر جنرل (آئی جی) سندھ اللہ ڈینو (اے ڈی) خواجہ سے تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ہے اور قاتلوں کو فوری طور پر گرفتار کرنے کا حکم بھی جاری کیا ہے۔ یہ اطلاع پاکستانی میڈیا نے دی ہے۔ خرم ذکی کا شمار سول سوسائٹی کے سرگرم رہنماؤں میں ہوتا تھا۔ وہ ماضی میں صحافت کے پیشے سے بھی منسلک رہ چکے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ لیٹ اَس بلڈ پاکستان (Let US Build Pakistan) کے سوشل میڈیا پیج کو چلا رہے تھے۔

خرم ذکی کے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے مطابق وہ نیوز ون ٹی وی چینل میں انفوٹینمنٹ اور مذہبی پروگرامات سے بھی منسلک تھے۔ خرم ذکی سول سوسائٹی کے رہنما جبران ناصر کے ساتھ لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کے خلاف مظاہروں میں بھی مبینہ طور پر شریک رہے تھے۔

First published: May 08, 2016 06:38 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading