اپنے مفادات کے لیے پاکستان نے جہادیوں کو دی ٹریننگ۔ وزیراعظم عمران خان کا اعتراف

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے آخر کاراعتراف کرلیا ہے کہ ان کہ ان کے ملک کی زمین کا استعمال جہادیوں کو ٹریننگ دینے کیلئے کیاجاتارہاہے۔

Sep 13, 2019 11:50 AM IST | Updated on: Sep 13, 2019 11:50 AM IST
اپنے مفادات کے لیے پاکستان نے جہادیوں کو دی ٹریننگ۔ وزیراعظم عمران خان کا اعتراف

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان: فائل فوٹو

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے آخر کاراعتراف کرلیا ہے کہ ان کہ ان کے ملک کی زمین کا استعمال جہادیوں کو ٹریننگ دینے کیلئے کیاجاتارہاہے۔ عمران خان نے مانا ہے کی سوویت یونین کے خلاف جہاد کرنے کیلئے پاکستان نے 80 کی دہائی میں جہادیوں کو ٹریننگ دی۔ اتنا ہی نہیں انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ افغانستان میں امریکہ کو کامیابی نہ مل پانے پر ان کے ملک کو قصوروار ٹھہرایا جانا غلط ہے۔

روس کے ٹی وی چینل آر ٹی رشیہ ٹوڈے کو انٹرویو میں عمران نے کہا کہ جب سوویت نے افغانستان پر قبضہ کرلیا تھا ان دنوں 80 کی دہائی میں ہم نے ان مجاہدین لوگوں کو سوویت کے خلاف جہاد کرنے کیلئے ٹریننگ دی تھی۔ ان لوگوں کو پاکستان کے ذریعے ٹرینڈ کیا گیا تھا جن کی فنڈنگ سی آئی اے کررہی تھی۔

پاکستان نے70 ہزار افراد کو کھویاہے:عمران خان

Loading...

عمران نے کہا کہ اب ایک دہائی کے بعد جب امریکی افغانستان میں آئے تو وہیں گروپ جو پاکستان میں ہیں وہ انہیں جہادی نہیں بلکہ دہشت گرد مانتے ہیں۔ یہ ایک بہت بڑاتضاد تھا اور میں محسوس کیا کہ پاکستان غیر جانبدار ہونا چاہئے کیونکہ اس میں شامل ہوکر یہ گروپ ہمارے خلاف ہوگئے۔پاکستان کے وزیر اعظم نے کہا کہ 'ہم نے 70،000 افراد کے ساتھ 100 ارب ڈالر کی معیشت کھو دی۔ آخر میں ہم پر یہ الزام بھی لگا کہ ہماری وجہ سے امریکہ،افغانستان میں کامیاب نہیں ہوپایا۔ مجھے لگتا ہے کہ یہ پاکستان کیلئے غلط ہے'۔عمران نے کہا کہ واشنگٹن کی جنگ میں شامل ہونے پر اسلام آباد کو بہت نقصان پہنچا۔

Loading...