اپنا ضلع منتخب کریں۔

    سرجیکل اسٹرائیک سے متعلق اپنے افسر کے اعتراف کو فرضی قراردینے میں پاکستان مصروف

    سرجیکل اسٹرائیک پر پاک مقبوضہ کشمیر کے میر پور کے پولیس افسر کے اعتراف کو پاکستان جھوٹا ثابت کرنے میں لگ گیا ہے ۔

    سرجیکل اسٹرائیک پر پاک مقبوضہ کشمیر کے میر پور کے پولیس افسر کے اعتراف کو پاکستان جھوٹا ثابت کرنے میں لگ گیا ہے ۔

    سرجیکل اسٹرائیک پر پاک مقبوضہ کشمیر کے میر پور کے پولیس افسر کے اعتراف کو پاکستان جھوٹا ثابت کرنے میں لگ گیا ہے ۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      اسلام آباد : سرجیکل اسٹرائیک پر پاک مقبوضہ کشمیر کے میر پور کے پولیس افسر کے اعتراف کو پاکستان جھوٹا ثابت کرنے میں لگ گیا ہے ۔  پاکستان نے دعوی کیا کہ ایک اہم ہندوستانی نیوز چینل (سی این این نیوز 18، آئی بی این 7) نے پاکستانی افسر کا ایک فرضی انٹرویو نشر کیا ہے ۔ افسر غلام اکبر نے انٹرویو میں سرحد پار دہشت گردوں کے کیمپوں پر ہندوستان کے سرجیکل اسٹرائک کی تصدیق کی تھی  ۔

      خیال رہے کہ آئی بی این 7 کے صحافی منوج گپتا نے پنجاب کا آئی جی بن کر میر پور کے ایس پی غلام اکبر کو فون کیا تھا ۔ بات چیت میں غلام نے اعتراف کیا تھا کہ پی او کے میں ہندوستانی فوج نے دھاوا بولا تھا اور اس میں پاکستانی فوج کے لوگ بھی مارے گئے تھے ۔

      پاکستان کی وزارت خارجہ کا الزام ہے کہ سی این این نیوز 18 نے پاک مقبوضہ کشمیر کے پولیس افسر غلام اکبر کا فرضی انٹرویو نشر کیا ، جس میں افسر نے ہندوستان کے سرجیکل اسٹرائک کی تصدیق کی تھی ۔

      وزارت نے ایک بیان میں بتایا کہ رپورٹر نے خود کو پنجاب پولیس کے انسپکٹر جنرل کے طور پر پیش کیا ۔  وزارت نے مزید کہا اکبر نے فون پر ایسی کوئی بات کرنے سے صاف انکار کردیا ۔ علاوہ ازیں ہندوستانی ٹی وی چینل کی ریکارڈنگ میں آواز بھی ان کی (اکبر) نہیں ہے ۔  بیان میں وزارت نے مزید کہا ہے کہ گھریلو سیاسی فائدہ کے لئے کہانیاں گھرنے کے مقصد سے فرضی پروگرام نشر کرنے کے لئے ہندوستانی میڈیا کی پاکستان مذمت کرتا ہے ۔
      First published: