ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاک مقبوضہ کشمیر پر فوجی سربراہ نرونے کے بیان سے بوکھلایا پاکستان ، کہا : ہم بھی تیار

پاکستانی فوج کے ترجمان کے ٹویٹر ہینڈل سے جاری ایک ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی فوج کے سربراہ کا بیان ملک کے حالات سے توجہ ہٹانے کے لئے دیا گیا ہے ۔

  • Share this:
پاک مقبوضہ کشمیر پر فوجی سربراہ نرونے کے بیان سے بوکھلایا پاکستان ، کہا : ہم بھی تیار
پاکستانی وزیر اعظم عمران خان ۔ فائل فوٹو ۔

ہندوستانی فوجی سربراہ منوج مکند نرونے نے ہفتہ کے روز کہا تھا کہ اگر فوج کو پارلیمنٹ سے حکم مل جاتا ہے تو وہ پاکستان مقبوضہ کشمیر کو اپنے کنٹرول میں لے سکتی ہے ۔ اس بیان کو پاکستان کے لئے ایک واضح پیغام کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ آرمی چیف کے اس بیان کے بعد پاکستان بری طرح بوکھلا گیا ہے۔ فوجی سربراہ کے اس بیان کے بعد پاکستان نے ہندوستان کو گیدڑ بھبھکی دینے کی کوشش کی ہے۔


پاکستانی فوج کے ترجمان کے ٹویٹر ہینڈل سے جاری ایک ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ ہندوستانی فوج کے سربراہ کا بیان ملک کے حالات سے توجہ ہٹانے کے لئے دیا گیا ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ پاکستان کی جانب سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ پاکستان کی مسلح افواج ہندوستان کی جانب سے کی جانے والی کسی بھی کارروائی کا جواب دینے کے لئے پوری طرح تیار ہے۔



قابل ذکر ہے کہ ہندوستانی فوج کے سربراہ جنرل منوج نرونے نے کہا تھا کہ اگر پارلیمنٹ پاک مقبوضہ کشمیر کو ملک میں شامل کرنے کا حکم دیتی ہے ، تو فوج کارروائی کرنے کےلئے تیار ہے۔ جنرل نرونے نے سالانہ پریس کانفرنس میں اس بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں کہا تھا کہ پارلیمنٹ نے کئی برسوں پہلے ایک تجویز پاس کی تھی کہ اس وقت کا مکمل جموں و کشمیر ہمارا حصہ ہے ۔ اگر پارلیمنٹ چاہتی ہے کہ یہ علاقہ ہمارا ہو ، تو حکم ملنے پر کارروائی کی جائےگی۔

واضح رہے کہ پارلیمنٹ نے 1990 کی دہائی میں اتفاق رائےسے ایک تجویز پاس کی تھی ، جس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے قبضے والا کشمیر مکمل جموں اور کشمیرہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے۔ جنرل نرونے سے یہ بھی پوچھا گیا تھا کہ کیا انہیں حکومت کی جانب سے پی او کے پر کارروائی کرنے کے بارے میں کوئی حکم ملا ہے ۔ حالانکہ انہوں نے اس بارے میں براہ راست طورپر کچھ نہیں کہا ۔
پاک مقبوضہ کشمیر کو لے کر فوجی سربراہ کا بڑا بیان ، کہا : حکم ملا تو کریں گے کارروائی
First published: Jan 11, 2020 11:47 PM IST