ہوم » نیوز » عالمی منظر

اب قمر جاوید باجوہ نے کہا : ماضی کو بھولیں ، جانئے امن کا راگ کیوں الاپنے لگا ہے پاکستان

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے بعد اب فوجی سربراہ قمر جاوید باجوہ (Qamar Javed Bajwa) نے کہا کہ ماضی کی یادوں کو بھلا کر ہندوستان اور پاکستان آگے بڑھیں

  • Share this:
اب قمر جاوید باجوہ نے کہا : ماضی کو بھولیں ، جانئے امن کا راگ کیوں الاپنے لگا ہے پاکستان
اب قمر جاوید باجوہ نے کہا : ماضی کو بھولیں ، جانئے امن کا راگ کیوں الاپنے لگا ہے پاکستان

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے جمعرات کو کہا کہ یہ ہندوستان اور پاکستان کیلئے 'ماضی کو بھولنے' اور 'آگے بڑھنے' کا وقت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں پڑوسی ممالک کے درمیان امن سے جنوب اور وسطی ایشیا میں ترقی کے امکانات کو کھولنے میں مدد ملے گی ۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے اسلام آباد میں سیکورٹی ڈائیلاگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تنازعات کی وجہ سے علاقائی امن اور ترقی کے امکانات ان سلجھے ایشوز کی وجہ سے ہمیشہ یرغمال رہے ہیں ۔


انہوں نے کہا کہ میرا ماننا ہے کہ یہ وقت ماضی کو بھولنے اور آگے بڑھنے کا ہے ۔ غور طلب ہے کہ ہندوستان نے گزشتہ ماہ کہا تھا کہ وہ پاکستان کے ساتھ دہشت گردی اور تشدد سے پاک ماحول کے ساتھ نارمل پڑوسی تعلقات کی امید کرتا ہے ۔ ہندوستان نے کہا تھا کہ اس کی ذمہ داری پاکستان پر ہے کہ وہ دہشت گردی اور دشمنی سے پاک حالات پیدا کرے ۔


پاکستانی فوج کے سربراہ باجوہ نے کہا کہ  ہمارے پڑوسی کو خاص طور پر کشمیر میں ایک سازگار ماحول بنانا ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ ان میں سب سے اہم ایشو کشمیر کا ہے ۔ یہ سمجھنا اہم ہے کہ پرامن طریقوں کے ذریعہ سے کشمری تنازع کے حل کے بغیر اس علاقہ میں امن کی کوئی پہل کامیاب نہیں ہوسکتی ہے ۔ باجوہ نے علاقائی کشیدگی کو ملک کی غربت سے جوڑتے ہوئے کہا کہ اس سے نقصان ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم سیکورٹی پر ضرورت سے زیادہ خرچ کرتے ہیں ، اس سے ہم پر ہی اثر پڑتا ہے ۔


جنرل باجوہ کے بیان سے ایک دن پہلے وزیر اعظم عمران خان نے اسی پلیٹ فارم پر ایسی ہی بات کہی تھی ۔ عمران خان نے بدھ کو کہا تھا کہ ان کے ملک کے ساتھ امن رکھنے پر ہندوستان کو اقتصادی فائدہ ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے ہندوستان کو پاکستانی سرزمین کے ذریعے وسائل سے مالا مال وسطی ایشیا تک پہنچنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ ہندوستان کو پہلا قدم اٹھانا ہوگا ، جب تک وہ ایسا نہیں کریں گے ، ہم زیادہ کچھ نہیں کرسکتے ہیں۔

جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے مابین امن کی فضا  مشرقی اور مغربی ایشیا کے مابین رابطے کو یقینی بناتے ہوئے جنوبی اور وسطی ایشیا کی صلاحیتوں کو کھولنے کے لئے بہت ضروری ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 18, 2021 08:06 PM IST