உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گرد حافظ سعید اور مسعود اظہر سے وابستہ 11 تنظیموں پر پاکستانی حکومت نے لگائی پابندی

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    پاکستان کی وزارت داخلہ نے ممنوعہ دہشت گرد تنظیموں جماعۃ الدعوہ ، فلاح انسانیت فاؤنڈیشن (ایف آئی ایف) اور جیش محمد سے تعلق رکھنے کے الزام میں 11 تنظیموں کو ممنوعہ فہرست میں ڈال دیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      پاکستان کی وزارت داخلہ نے ممنوعہ دہشت گرد تنظیموں جماعۃ الدعوہ ، فلاح انسانیت فاؤنڈیشن (ایف آئی ایف) اور جیش محمد سے تعلق رکھنے کے الزام میں 11 تنظیموں کو ممنوعہ فہرست میں ڈال دیا ہے۔ وزارت داخلہ کی طرف سے ہفتہ کے روز جاری نوٹیفکیشن کے مطابق جن تنظیموں پر پابندی عائد کی گئي ہے ان میں لاہور کے الانفال ٹرسٹ، ادارہ خدمت خلق، الدعوہ و الارشاد، الحمد ٹرسٹ، الفضل فاؤنڈیشن / ٹرسٹ، مسجد اور ویلفیئر ٹرسٹ، مدینہ فاؤنڈیشن، معاذ بن جبل ایجوکیشن ٹرسٹ اور الاجر فاؤنڈیشن اور بہاول پور میں واقع الرحمۃ ٹرسٹ آرگنائزیشن اور کراچی میں واقع الفرقان ٹرسٹ شامل ہیں۔
      یہ کارروائی قومی ایکشن پلان کے تحت کی گئی ہے۔ ممنوعہ دہشت گردوں کے خلاف کارروائی جاری ہے اور اس کے تحت دہشت گردوں کی گرفتاری کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ گزشتہ 14 فروری کو جیش محمد کی جانب سے پلوامہ حملے کے بعد ہندوستان کی جانب سے دباؤ کے تحت پاکستان کی قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کے دوران حکومت نے جیش محمد کے خلاف مہم شروع کرنے اور جماعۃ الدعوہ اور ایف آئي ایف پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جیش محمد کو سال 2002 میں سابق فوجی حکمران پرویز مشرف نے بھی ممنوعہ تنظیم قرار دیا تھا۔
      پاکستان میں حکومت جماعۃ الدعوہ اور ایف آئي ایف کی جانب سے چلائے جانے والے اداروں کو بھی اپنے کنٹرول میں لے رہی ہے۔
      First published: