اقتصادی تنگی سے جوجھ رہے پاکستان نے بنا ڈالا یہ انوکھا ریکارڈ

عمران خان کے اقتدار میں آنے کے ایک سال بعد ہی پاکستان کی ایسی حالت ہو گئی ہے کہ جس کی کسی نے امید بھی نہیں کی تھی۔ حالات یہ ہو چکے ہیں کہ کوئی بھی ملک اس کا ساتھ دینے کے لئے تیار نہیں ہے۔

Oct 10, 2019 09:45 AM IST | Updated on: Oct 10, 2019 09:53 AM IST
اقتصادی تنگی سے جوجھ رہے پاکستان نے بنا ڈالا یہ انوکھا ریکارڈ

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان: فائل فوٹو

اسلام آباد۔  پاکستان کے اقتصادی حالات دن بہ دن خراب ہوتے جا رہے ہیں۔ روز مرہ کی چیزوں کی بڑھتی قیمت نے پاکستان کی کمر توڑ دی ہے۔ عمران خان کے اقتدار میں آنے کے ایک سال بعد ہی پاکستان کی ایسی حالت ہو گئی ہے کہ  جس کی کسی نے امید بھی نہیں کی تھی۔ حالات یہ ہو چکے ہیں کہ کوئی بھی ملک اس کا ساتھ دینے کے لئے تیار نہیں ہے۔ معاشی بحران سے جوجھ رہا پاکستان دنیا کے سامنے مدد کی گہار لگا رہا ہے۔ پاکستان کی اسی کمزور حالت نے جانے۔ انجانے میں ایک ایسا ریکارڈ بنا دیا ہے جس کے بارے میں اس نے سوچا بھی نہیں تھا۔ دراصل، عمران خان کی حکومت نے ایک سال کی مدت کار میں ریکارڈ قرض لئے ہیں۔

ابھی تک کے اعدادوشمار کے مطابق، عمران خان کی حکومت نے ایک سال کی مدت کار کے دوران ملک کے کل قرض میں  7509 ارب( پاکستانی) روپئے کا اضافہ ہوا ہے۔ پاکستانی میڈیا سے ملی اطلاعات کے مطابق، قرض کے یہ اعداد وشمار اتنے بڑھ گئے ہیں کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے قرض سے منسلک ان اعدادوشمار کی جانکاری وزیر اعظم دفتر کو بھجوا دی ہے۔

Loading...

دو مہینوں کے اندر پاکستان کے قرض میں 1.43 فیصدی کا اضافہ ہوا ہے۔ دو مہینوں کے اندر پاکستان کے قرض میں 1.43 فیصدی کا اضافہ ہوا ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے اعدادوشمار پر غور کریں تو پچھلے دو مہینوں میں پاکستان کی معاشی حالت سب سے زیادہ خراب ہوئی ہے۔ دو مہینوں کے اندر پاکستان کے قرض میں 1.43 فیصدی کا اضافہ ہوا ہے۔ پاکستان کے اوپر موجودہ قرض کی بات کریں تو یہ بڑھ کر 32,240 ارب روپئے ہے۔ اگست 2018 میں یہ قرض 24,732 ارب روپئے تھا۔

 

Loading...