ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان کے پاس 10 سال میں ہندوستان سے دوگنے جوہری ہتھیار ہوں گے

واشنگٹن :امریکہ کے دو بڑے تھنک ٹینکوں نے کہا ہے کہ پاکستان تقریبا ایک دہائی میں تقریبا 350 جوہری ہتھیار رکھنے کی سمت میں گامزن ہے جو امریکہ اور روس کے بعد دنیا کا تیسرا سب سے بڑا جوہری اسلحہ کا ذخیرہ ہوگا اور یہ ہندوستان کے جوہری ہتھیاروں سے دوگنا ہوگا ۔

  • Share this:
پاکستان کے پاس 10 سال میں ہندوستان سے دوگنے جوہری ہتھیار ہوں گے
واشنگٹن :امریکہ کے دو بڑے تھنک ٹینکوں نے کہا ہے کہ پاکستان تقریبا ایک دہائی میں تقریبا 350 جوہری ہتھیار رکھنے کی سمت میں گامزن ہے جو امریکہ اور روس کے بعد دنیا کا تیسرا سب سے بڑا جوہری اسلحہ کا ذخیرہ ہوگا اور یہ ہندوستان کے جوہری ہتھیاروں سے دوگنا ہوگا ۔

واشنگٹن :امریکہ کے دو بڑے تھنک ٹینکوں نے کہا ہے کہ پاکستان تقریبا ایک دہائی میں تقریبا 350 جوہری ہتھیار رکھنے کی سمت میں گامزن ہے جو امریکہ اور روس کے بعد دنیا کا تیسرا سب سے بڑا جوہری اسلحہ کا ذخیرہ ہوگا اور یہ ہندوستان کے جوہری ہتھیاروں سے دوگنا ہوگا ۔

دو معروف تھنک ٹینک ٹام ڈالٹن اور مشیل كیرپن کی ایک رپورٹ کے مطابق اگلے پانچ سے 10 سال میں پاکستان نہ صرف ہندوستان سے دوگنے جوہری ہتھیار رکھ سکتا ہے بلکہ یہ برطانیہ، چین اور فرانس کے ہتھیاروں سے بھی زیادہ ہو سکتے ہیں۔جس سے امریکہ اور روس کے بعد پاکستان کے پاس تیسرا سب سے بڑا جوہری اسلحہ کا ذخیرہ ہوگا ۔

ا سٹمسن سینٹر اور كارنجي انڈامنٹ فار انٹرنیشنل پیس کی طرف سے جاری 48 صفحے کی رپورٹ اے نارمل نیوکلیئر پاکستان کے مطابق اگر پاکستان موجودہ راہ پر گامزن رہا اور ہندوستان کے ساتھ مؤثر طریقے سے مقابلہ آرائی کی اس ضرورت کا از سرنو جائزہ نہیں لیاگیا تو پاکستان کےپاس 10 سال میں تقریبا 350 جوہری ہتھیاروں کا ذخیرہ ہوگا اور اگر نئی دہلی بھی اس دوڑ میں اپنی رفتار پکڑ لے اور پاکستان اسی حساب سے جوہری ہتھیار بناتا رہے تو پاکستان کا جوہری ذخیرہ 350 جوہری ہتھیاروں سے آگے بھی نکل سکتا ہے۔

دونوں تنظیموں نے کہا کہ پاکستان جس طرح سےہندوستان سے جوہری ہتھیاروں اور روایتی فوجی صلاحیتوں کے معاملے میں آگے نکلنا چاہتا ہے یا کم از کم اس کے برابر ہونا چاہتا ہے، اس سے جوہری ہتھیاروں سے متعلق مستقبل پاکستان کے لئے ہندوستان سے زیادہ مایوس کن نظر آرہا ہے ۔

First published: Aug 28, 2015 11:12 AM IST