உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Imran Khan کو اجتماعی استعفیٰ کا مشورہ، رات 10 بجے پاکستانی عوام سے کریں گے خطاب

    عمران خان کو اجتماعی استعفیٰ کی تجویز، رات 10 بجے ملک کو کریں گے خطاب

    عمران خان کو اجتماعی استعفیٰ کی تجویز، رات 10 بجے ملک کو کریں گے خطاب

    پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کو پاکستان پولیٹیکل کمیٹی کی طرف سے اجتماعی استعفیٰ دینے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ عمران خان جمعہ کی شب 10 بجے پاکستان کے عوام سے خطاب بھی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے عوام کی خدمت کی ہے اور عوام ہمارے ساتھ ہے۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کو پاکستان پولیٹیکل کمیٹی کی طرف سے اجتماعی استعفیٰ دینے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ اس درمیان جمعہ کو ہوئی کابینہ میٹنگ کے بعد عمران خان نے ایک چینل سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم ملک کے والد کی طرح ہوتا ہے۔ ہم نے عوام کی بھلائی کے لئے سیاست کی ہے اور ہماری مدت میں ملک کی شبیہ دنیا میں اچھی ہوئی۔ عمران خان جمعہ کی رات 10 بجے پاکستان کے عوام کو خطاب بھی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے عوام کی خدمت کی ہے اور عوام ہمارے ساتھ ہے۔ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق، ہفتہ کو تحریک عدم اعتماد پر ووٹنگ ہونی ہے۔ اگر استعفیٰ ہوا تو حکومت پہلے ہی گر جائے گی اور ووٹنگ نہیں ہوگی۔ اگر ووٹنگ ہوتی ہے تو بھی عمران خان اقتدار سے باہر ہوسکتے ہیں کیونکہ وہ نمبر گیم میں پیچھے چل رہے ہیں۔

      پی ٹی وی کو دیئے انٹرویو میں عمران خان نے کہا کہ پاکستان ان اصولوں سے بہت دور ہے، جن پر ملک بنایا گیا تھا۔ آخری نبی کے ذریعہ بتایا گیا راستہ ہی صحیح ہے۔ جیسا کہ مولانا روم نے کہا تھا، جب آپ کو دیا جاتا ہے تو آپ رینگتے کیوں ہیں؟ عمران خان نے کہا کہ زندگی کا تجربہ یہ سمجھنے میں مدد کرتا ہے کہ سب سے اچھا راستہ کیا ہے اور کون سا غلط ہے۔ میں نے نوجوانوں کو اس راستے پر لے جانے کی کوشش کی، جس میں وہ بہتر ہیں۔ یہ بدقسمتی ہے کہ اس بار اسلاموفوبیا سے نمٹا نہیں گیا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      پاکستانی وزیر اعظم عمران خان دے سکتے ہیں استعفیٰ، PTI رکن پارلیمنٹ کا دعویٰ- آج شام کچھ بڑا ہوگا

      اس درمیان خبریں ہیں کہ تحریک عدم اعتماد سے بچنے کے لئے عمران خان اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیں۔ ایسا بھی ممکن ہے کہ ان کی پارٹی کے سبھی اراکین پارلیمنٹ اور اراکین اسمبلی سبھی ایک ساتھ استعفیٰ دے دیں۔ حالانکہ جو عمران خان کی پارٹی چھوڑ چکے ہیں، انہیں پارٹی نا اہل کہتے ہوئے پارٹی سے باہر کر سکتی ہے۔ دوسری جانب، جیو نیوز کی رپورٹ کے مطابق، پاکستان کے داخلی امور کے وزیر شیخ رشید نے کہا کہ اجتماعی استعفیٰ سے ملک میں موجودہ سیاسی بحران کا حل ہوسکتا ہے۔

      پاکستان کے وزیر شیخ رشید نے کہا کہ میں نے تین ماہ پہلے مشورہ دیا تھا۔ آپ استعفیٰ دے دو، اسمبلی کو تحلیل کردو۔ ایمرجنسی لگاو۔ گورنر راج نافذ کرو۔ میں ہر معاملے میں صحیح تھا‘۔ انہوں نے کہا، ‘میں اجتماعی استعفیٰ کے اپنے فیصلے پر قائم ہوں۔ ہمیں سڑکوں پر اترنا چاہئے اور کرائے کی ان توپوں (اپوزیشن) کو بے نقاب کرنا چاہئے۔ وہ پاکستان کی غیر ملکی پالیسی پر (معاہدہ) کریں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: