உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan : عمران خان کی سفارش پر صدر نے قومی اسمبلی کی تحلیل، جانئے آج کی اہم اپ ڈیٹس

    پاکستانی وزیر اعظم عمران خان اپنے ملک سے کر رہے ہیں خطاب

    پاکستانی وزیر اعظم عمران خان اپنے ملک سے کر رہے ہیں خطاب

    پاکستان قومی اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے خلاف پیش کی گئی تحریک عدم اعتماد کو آئین کے منافی قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا اور قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی کر دیا۔

    • Share this:
      پاکستان : پاکستان قومی اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے خلاف پیش کی گئی تحریک عدم اعتماد کو آئین کے منافی قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا اور قومی اسمبلی  کا اجلاس ملتوی کر دیا۔ ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری کی سربراہی میں اسمبلی ہونے والے ہنگامہ خیز اجلاس میں وزیر قانون فواد چوہدری نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ 7 مارچ کو ایک میٹنگ ہوتی ہے اور اس کے ایک روز بعد 8 مارچ کو وزیراعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کی جاتی ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے :  بریانی کے ٹھیلے پر لوٹ پاٹ اور توڑ پھور، سنگیت سوم سینا کے صدر سمیت 30 لوگوں پر کیس درج


      اسمبلی میں قراردار مسترد کئے جانے کے کچھ دیر بعد وزیرا عظم پاکستان عمران خان نے قوم سے خطاب کیا اور اس دوران انہوں نے کہا کہ انہوں نے صدر کو اسمبلیاں تحلیل کرنے کی تجویز بھیج دیں ہیں ۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اس طرح کی سازش قوم  کامیاب نہیں ہونے دے گی، اسپیکر نے اپنی اتھارٹی اور آئینی طاقت سے جو فیصلہ  کیا اس کے بعد میں نے ابھی سے صدر  کو اسمبلیاں تحلیل  کرنے کی تجویز بھیج دی ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ٹی ایس سنگھ دیو نے کہا: ہاں... AAP نے رابطہ کیا تھا، لیکن کانگریس نہیں چھوڑ رہا، ایک خواہش ابھی ادھوری ہے


      انہوں نے کہا کہ جمہوری معاشرے میں عوام کے پاس جائیں، الیکشن ہوں، عوام فیصلہ کرے وہ کسے چاہتے ہیں، کوئی باہر سے سازش، کرپٹ لوگ، پیسہ دے کر قوم کا فیصلہ نہ کریں۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جنہوں  نے اچکنیں سلوائیں اور لوگوں کو کروڑوں روپے دیے تو وہ پیسہ ضائع ہوگیا۔

      اس سے پہلے پاکستان کی پارلیمنٹ میں  ڈپٹی اسپیکر  نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 5 کے تحت کسی بھی غٖیر ملکی طاقت کے کہنے پر حکومت تبدیل نہیں کی جا سکتی لہذا اپوزیشن کی 8 مارچ کو وزیراعظم کے خلاف پیش کی گئی تحریک عدم اعتماد کو آئین سے انحراف قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کر دیا جاتا ہے اور قومی اسمبلی کا اجلاس غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کیا جاتا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: