உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران خان اور معاون لڑیں گے ’آزادی‘ کی لڑائی! PTI لیڈر نے کہا- اب پارٹی اٹھائے گی یہ قدم

    عمران خان اور معاون لڑیں گے ’آزادی‘ کی لڑائی!

    عمران خان اور معاون لڑیں گے ’آزادی‘ کی لڑائی!

    Pakistan Former PM Imran Khan: پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان (Imran Khan) کے قریبی فواد چودھری نے پیر کے روز کہا کہ پاکستان تحریک انصاف پارٹی (PTI) کے سبھی اراکین پارلیمنٹ نئے وزیر اعظم کے انتخاب کے لئے ووٹنگ سے پہلے قومی اسمبلی سے استعفیٰ دے دیں گے۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان (Imran Khan) کے قریبی فواد چودھری نے پیر کے روز کہا کہ پاکستان تحریک انصاف پارٹی (PTI) کے سبھی اراکین پارلیمنٹ نئے وزیر اعظم کے انتخاب کے لئے ووٹنگ سے پہلے قومی اسمبلی سے استعفیٰ دے دیں گے۔ سابق وزیر اطلاعات فواد چودھری نے یہ بھی کہا کہ پی ٹی آئی نے مبینہ انتخابات کا حصہ بننے سے انکار کردیا ہے، جس کے لئے پارٹی نے سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو نامزد کیا تھا۔

      انہوں نے ٹوئٹ کیا، ’پاکستان تحریک انصاف پارلیمانی کمیٹی نے قومی اسمبلی سے استعفیٰ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ آج، اسمبلی کے سبھی اراکین صدر کو اپنا استعفیٰ سونپ رہے ہیں۔ ہم آزادی کے لئے لڑیں گے، اس درمیان، جیو ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ عمران خان نے بھی قومی اسمبلی کے اراکین کے طور پر استعفیٰ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

      معاملے سے جڑے ذرائع نے عمران خان کےحوالے سے کہا، ’ہم کسی بھی حالت میں اس اسمبلی میں نہیں بیٹھیں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی قومی اسمبلی میں ان لوگوں کے ساتھ نہیں بیٹھے گی، جنہوں نے پاکستان کو لوٹا ہے اور جنہیں بیرونی طاقتیں لے کر آئی ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      وزیر اعظم بنتے ہی شہباز شریف نے الاپا کشمیر راگ، کہا- ہندوستان سے اچھے تعلقات چاہتے ہیں لیکن...

      حالانکہ ذرائع نے کہا کہ پارٹی کے بیشتر اراکین نے استعفیٰ دینے کے عمران خان کے فیصلے کی مخالفت کی اور انہیں مشورہ دیا کہ انہیں ہر محاذ پر اپوزیشن کا ڈٹ کر مقابلہ کرنا چاہئے۔ عمران خان نے جواب دیا، ‘اگر میں اکیلا رہ گیا تو بھی میں استعفیٰ دے دوں گا‘۔

      بہر حال پی ایم ایل-این لیڈر شہباز شریف پاکستان کے نئے وزیر اعظم منتخب کرلئے گئے ہیں اور آج رات 8 بجے عہدے کا حلف لیں گے۔ عمران خان ایوان کا اعتماد کھونے کے بعد ملک کی تاریخ میں عہدہ گنوانے والے پہلے وزیر اعظم بن گئے۔ پاکستان 1947میں وجود میں آنے کے بعد سے کئی بار اقتدار کی تبدیلی اور فوجی تختہ پلٹ کے ساتھ سیاسی غیر استحکام سے جدوجہد کرتا رہا ہے۔ کسی بھی وزیر اعظم نے اب تک پورے پانچ  سال کی مدت مکمل نہیں کی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: