உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اقتدار سے بے دخل ہونے کے بعد Imran Khan کی پہلی ریلی، کہا- غیر ملکی سازش کا کروں گا انکشاف

    اقتدار سے بے دخل ہونے کے بعد Imran Khan کی پہلی ریلی

    اقتدار سے بے دخل ہونے کے بعد Imran Khan کی پہلی ریلی

    Imran Khan Peshawar Rally: پشاور میں ریلی سے پہلے عمران خان نے اپنے ٹوئٹ میں کہا، ’ہم فوری الیکشن کا مطالبہ کر رہے ہیں، کیونکہ آگے بڑھنے کا یہی واحد طریقہ ہے۔ منصفانہ اور آزادانہ انتخابات کے ذریعہ لوگوں کو فیصلہ لینے دیں کہ وہ کسے اپنا وزیر اعظم چاہتے ہیں۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان میں وزیر اعظم کی کرسی چھننے اور اقتدار سے بے دخل ہونے کے بعد عمران خان (Imran Khan) بوکھلائے ہوئے ہیں۔ بدھ کو پشاور میں ان کی ریلی ہے۔ عمران خان نے کہا کہ اس ریلی (Imran Khan Peshawar Rally) میں وہ غیر ملکی سازش کا انکشاف کریں گے۔ اے آر وائی نیوز سے خاص بات چیت میں پاکستان کے سابق وزیر شیخ رشید نے کہا کہ بے دخل وزیر اعظم اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے صدر عمران خان بدھ کے روز پشاور میں ایک عوامی جلسے کو خطاب کریں گے۔ شیخ رشید نے کہا کہ پشاور کے بعد عمران خان اتوار کو کراچی بھی جائیں گے۔ شیخ رشید نے کہا کہ عمران خان آنے والے اتوار سے تراویح کی نماز سے سحری تک نے ملک گیر ہڑتال کی اپیل کی۔

      عمران خان نے بھی ٹوئٹ کرکے اپنی ریلی کی جانکاری دی۔ انہوں نے بتایا، ’بدھ کو میں پشاور میں ایک جلسہ منعقد کروں گا۔ ایک بیرون ملک سے متاثر حکومت کی تبدیلی کے ذریعے ہٹائے جانے کے بعد یہ میرا پہلا اجتماع ہوگا۔ میں چاہتا ہوں کہ ہمارے سبھی لوگ آئیں۔ کیونکہ پاکستان ایک آزاد، ایک خودمختار ریاست کے طور پر بنایا گیا تھا، نہ کہ غیر ملکی طاقتوں کی صورتحال کٹھ پتلی کے طور پر۔ پشاور میں ریلی سے پہلے عمران خان نے اپنے ٹوئٹ میں کہا، ’ہم فوری الیکشن کا مطالبہ کر رہے ہیں، کیونکہ آگے بڑھنے کا یہی واحد طریقہ ہے۔ منصفانہ اور آزادانہ انتخابات کے ذریعہ لوگوں کو فیصلہ لینے دیں کہ وہ کسے اپنا وزیر اعظم چاہتے ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      ’غیر ملکی سازش‘ کے مبینہ نوٹ کے ساتھ SC پہنچے عمران خان، جانئے آخر کیا ہے اس لیٹر میں

      تحریک عدم اعتماد پر اپوزیشن نے ماری بازی

      گزشتہ ہفتہ کے روز پل پل بدلتے حادثہ کے درمیان دیر رات کو شروع ہوئی ووٹنگ کے نتیجے میں متحدہ اپوزیشن کو 342 رکنی قومی اسمبلی میں 174 اراکین کی حمایت ملی، جو وزیراعظم کو بے دخل کرنے کے لئے ضروری اکثریت 172 سے زیادہ رہا۔ اس کے بعد ہی عمران خان کی کرسی ان سے چھن گئی۔

      شہباز شریف نے 23 ویں وزیر اعظم کے طور پر حلف لیا

      شہباز شریف نے پیر کے روز پاکستان کے 23ویں وزیر اعطم کے طور پر حلف لیا۔ اس سے ان کے سابق عمران خان کے خلاف 8 مارچ کو لائی گئی تحریک عدم اعتماد کے بعد سے ملک میں پیدا ہوا سیاسی بحران بھی ختم ہوگیا۔ سینیٹ کے صدر صادق سنجرانی نے صدر ڈاکٹر عارف علوی کی عدم موجودگی میں 70 سالہ شہباز شریف کو عہدے اور رازداری کا حلف دلایا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: