உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan: فوجی سربراہ کی تقرری پر عمران خان کا شہباز شریف پر حملہ، کہی یہ بڑی بات

    Pakistan: فوجی سربراہ کی تقرری پر عمران خان کا شہباز شریف پر حملہ، کہی یہ بڑی بات ۔ فائل فوٹو ۔

    Pakistan: فوجی سربراہ کی تقرری پر عمران خان کا شہباز شریف پر حملہ، کہی یہ بڑی بات ۔ فائل فوٹو ۔

    Pakistan Imran Khan on Army chief: سابق وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان میں آرمی چیف کی تقرری کو لے کر وزیر اعظم شہباز شریف پر حملہ تیز کر دیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, Indiaislamabadislamabad
    • Share this:
      اسلام آباد : سابق وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان میں آرمی چیف کی تقرری کو لے کر وزیر اعظم شہباز شریف پر حملہ تیز کر دیا ہے۔ حالانکہ آرمی چیف قمر جاوید باجوہ کی مدت کار ختم ہونے میں ابھی تین ماہ کا وقت ہے، لیکن عمران خان نے کہا ہے کہ آرمی چیف کی تقرری کو لے کر جو ڈرامہ چل رہا ہے ، اس کیلئے ملک کی موجودہ صورتحال ذمہ دار ہے۔ عمران خان نے کہا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ کے جانشین کا تقرر میرٹ کی بنیاد پر کیا جانا چاہئے ۔ 2016 میں تقرری پائے 61 سالہ آرمی چیف نومبر کے آخری ہفتہ میں ریٹائر ہونے والے ہیں۔ آرمی چیف کی تقرری تین سال کیلئے ہوتی ہے، لیکن جنرل باجوہ کو 2019 میں تین سال کی اضافی مدت کار دی گئی تھی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: عمران خان پر لٹکی گرفتاری کی تلوار،ایف آئی اے نے جاری کیا نوٹس،جانئے پورا معاملہ


      پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے ایک سینئر لیڈر نے اشارہ دیا ہے کہ وزیر اعظم شہباز شریف اگست کے آخر تک اگلے آرمی چیف کی تقرری پر بات چیت شروع کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم ستمبر کے وسط تک آرمی چیف کی تقرری کے حوالے سے فیصلہ کر سکتے ہیں۔

       

      یہ بھی پرھئے: غیر مرد کے ساتھ ڈانس کرتی نظر آئی Findland کی وزیر اعظم، اگلی صبح تک وائرل ہوگئی تصاویر


      جیو نیوز کی خبر کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے صدر عمران خان نے پاکستان کی موجودہ صورتحال کو آرمی چیف کی تقرری سے جوڑتے ہوئے اس کو افسوس ناک قرار دیا۔ پاکستان میں آرمی چیف کے عہدہ پر کوئی شخص 64 سال کی عمر تک رہ سکتا ہے۔ قمر جاوید باجوہ کی عمر اس وقت 61 سال ہے۔

      حالانکہ عمران خان کی حکومت میں انہیں 3 سال کی توسیع دی جاچکی ہے، لیکن قیاس آرائی کی جا رہی ہے کہ باجوہ کی مدت کار میں ایک اور توسیع کی جا سکتی ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: