உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بربادی کے راستے پر پاکستان، نئے وزیر اعظم شہباز شریف نے مانا- جلد سدھارنے ہوں گے حالات

    بربادی کے راستے پر پاکستان، نئے وزیر اعظم شہباز شریف نے مانا- جلد سدھارنے ہوں گے حالات

    بربادی کے راستے پر پاکستان، نئے وزیر اعظم شہباز شریف نے مانا- جلد سدھارنے ہوں گے حالات

    وزیر اعظم شہباز شریف (Shahbaz Sharif) نے عہدہ سنبھالنے کے بعد اپنی پہلی کابینہ میٹنگ کی صدارت کرنے کے بعد بدھ کو کہا کہ پاکستان (Pakistan) قرض میں ڈوب رہا ہے اور یہ راستہ بربادی کی طرف لے جاتا ہے۔ لیکن اب اس کشتی کے کنارے تک پہنچانا نئی حکومت کا کام ہے۔

    • Share this:
      اسلام آباد: وزیر اعظم شہباز شریف (Shahbaz Sharif) نے عہدہ سنبھالنے کے بعد اپنی پہلی کابینہ میٹنگ کی صدارت کرنے کے بعد بدھ کو کہا کہ پاکستان (Pakistan) قرض میں ڈوب رہا ہے اور یہ راستہ بربادی کی طرف لے جاتا ہے۔ لیکن اب اس کشتی کے کنارے تک پہنچانا نئی حکومت کا کام ہے۔ پاکستان کو جلد ہی اپنے حالات سدھارنے ہوں گے، ورنہ نتائج بہت سنگین ہوسکتے ہیں۔ ان کے خطاب کا سرکاری میڈیا کے ذریعہ براڈ کاسٹ کیا گیا۔ شہباز شریف نے کابینہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا، ’میں اسے جنگی کابینہ مانتا ہوں کیونکہ آپ غریبی، بے روزگاری، مہنگائی کے خلاف لڑ رہے ہیں۔ یہ سبھی پریشانیوں کے خلاف جنگ ہے۔

      شہباز شریف نے کہا کہ گزشتہ حکومت مختلف موضوعات کو حل کرنے میں بری طرح ناکام رہی۔ انہوں نے تبادلہ خیال کی ’شدید اور مسلسل‘ عمل کے ذریعہ ملک، خصوصی طور پر غریب فیملی کو راحت مہیا کرانے پر زور دیا۔ شہباز شریف نے کابینہ میں شامل ہونے کے لئے اتحادی جماعتوں کو شکریہ ادا کیا اور پریشانیوں کو دور کرنے کے لئے کابینہ اتحادیوں کی صلاحیت کی سراہنا کی۔ انہوں نے اپنے اتحادی معاونین کو شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا، ’آج ایک اہم دن ہے کیونکہ ہم نے بدعنوان حکومت کو ہٹا کر آئینی اور قانونی طور پر عہدہ سنبھالا ہے‘۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      کرتار کاریڈور کے بہانے Pakistan کی ناپاک سازش، خفیہ ایجنسیوں کی نظر میں ہندوستانی زائرین 

      شہباز شریف نے کہا، ’یہ اتحاد پاکستان کی تاریخ میں سب سے وسیع ہے۔ یہ اتحادی پارٹیوں کے مختلف سیاسی نظریوں کے باوجود لوگوں کی خدمت کرے گا‘۔ شہباز شریف نے کہا کہ یہ کابینہ ‘تجربہ اور نوجوانوں کا مجموعہ‘ ہے۔ موضوع کا ذکر کرتے ہوئے، انہوں نے کہا کہ بجلی کی کمی اور بھاری قرض ملک کے سامنے اہم موضوعات میں سے ایک ہے۔ انہوں نے کہا، ‘ملک قرض میں ڈوب رہا ہے، لیکن ہمیں اس کی کشتی کو کنارے تک لے جانا ہے‘۔

      شہباز شریف کی کابینہ میں 31 کو فیڈرل منسٹر اور تین کو منسٹر آف اسٹیٹ کے طور پر حلف دلایا گیا۔ شہباز شریف کی کابینہ میں سب سے زیادہ PML-N کے 14 وزیر شامل ہیں۔ اس کے بعد بلاول بھٹو کی پارٹی پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے 9 وزرا کو شامل کیا گیا ہے۔ دراصل، پاکستان میں اسی ماہ عمران خان نے اقتدار گنوا دیا تھا۔ اپوزیشن کے ذریعہ عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد لگائی گئی تھی۔ سپریم کورٹ کی مداخلت کے بعد اس پر ووٹنگ ہوپائی تھی۔ اس پر ووٹنگ کے دوران عمران خان ناکام ہوگئے تھے۔ اس کے بعد اپوزیشن کا چہرہ رہے شہباز شریف نے پاکستان کے 23ویں وزیر اعظم عہدے کا حلف اٹھایا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: