ہوم » نیوز » عالمی منظر

بوکھلائے پاکستان کی ناپاک حرکت، متنازعہ نقشے میں کشمیر پر جتایا اپنا حق، ہندوستان نے دیا سخت جواب

پاکستان کی عمران حکومت (Imran Khan Government) نے منگل کو ملک کا نیا سیاسی نقشہ (Pakistan's New Political Map) جاری کیا ہے۔ پاکستان نے اس نقشے میں کشمیر کو اپنا حصہ بتایا ہے۔

  • Share this:
بوکھلائے پاکستان کی ناپاک حرکت، متنازعہ نقشے میں کشمیر پر جتایا اپنا حق، ہندوستان نے دیا سخت جواب
بوکھلائے پاکستان کی ناپاک حرکت، متنازعہ نقشے میں کشمیر پر جتایا اپنا حق، ہندوستان نے دیا سخت جواب

نئی دہلی: کشمیر (Kashmir) کو لے کر پاکستان (Pakistan) کی حکومت نے اب ایک اور ناپاک حرکت کو انجام دیا ہے۔ پاکستان کی عمران خان حکومت (Imran Khan Government) نے منگل کو ملک کا نیا سیاسی نقشہ (Pakistan's New Political Map) جاری کیا ہے۔ پاکستان نے اس نقشے میں کشمیر کو اپنا حصہ بتایا ہے۔ پاکستانی وزیر اعظم نے کہا کہ یہ نقشہ کابینہ اور مخالف پارٹیوں کے اتفاق سے منظور کیا گیا ہے اور آج سے آفیشیل طور پر سبھی مقامات پر اسی نقشے کا استعمال کیا جائے گا۔ اتنا ہی نہیں، پاکستانی وزیر اعظم نے گزشتہ سال 5 است کو ہندوستانی حکومت کے ذریعہ کشمیر سے ہٹائے گئے دفعہ 370 (Article 370) کو غیر قانونی قدم بھی قرار دیا ہے۔


پاکستان کی عمران خان حکومت نے منگل کو ملک کا نیا سیاسی نقشہ جاری کیا ہے۔ پاکستان نے اس نقشے میں کشمیر کو اپنا حصہ بتایا ہے۔
پاکستان کی عمران خان حکومت نے منگل کو ملک کا نیا سیاسی نقشہ جاری کیا ہے۔ پاکستان نے اس نقشے میں کشمیر کو اپنا حصہ بتایا ہے۔


پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی (Shah Mehmood Qureshi) نے کہا ہے کہ ’اس نقشے میں کشمیر، آزاد کشمیر (پاک مقبوضہ کشمیر) اور گلگت بالستان کا علاقہ ہے، جس کا حل نکالنے کے لئے پوری قوم خواہش کرتی ہے’۔ شاہ محمود قریشی نے دعویٰ کیا کہ ’سیاچن (Siachin) کل بھی ہمارا تھا، آج بھی ہمارا ہے’۔ اتنا ہی نہیں پاکستان نے وہاں ہندوستانی فوجیوں کی تعیناتی کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسے ہم چیلنج دے رہے ہیں اور اس حصے پر اپنے اختیار کا دعویٰ کر رہے ہیں۔


 پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے دعویٰ کیا کہ ’سیاچن (Siachin) کل بھی ہمارا تھا، آج بھی ہمارا ہے’۔
پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے دعویٰ کیا کہ ’سیاچن (Siachin) کل بھی ہمارا تھا، آج بھی ہمارا ہے’۔


سرکریک پر بھی پاکستان نے پیش کیا نیا دعویٰ

پاکستان کے سندھ صوبہ کو گجرات کے کچھ علاقے سے منقسم کرتی ہوئی بحیرہ عرب میں گرنے والی 96 کلو میٹر لمبی سرحد سرکریک پر بھی پاکستان کی طرف سے نیا دعویٰ پیش کیا گیا ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا 'ہماری منزل سری نگر ہے، یہ وہ خواب ہے جو ہمارے بزرگوں نے دیکھا اور اسے عمران خان نے اس نقشے میں رکھا ہے۔ پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ 'کشمیر کا صرف ایک حل ہے، جو کہ یونائیٹیڈ نیشنس کی سیکورٹی کونسل (United Nations Security Council) میں ہے، جو کہ کشمیر کے لوگوں کو یہ حق دیتی ہے کہ کشمیر کے لوگ ووٹ کے ذریعہ یہ طے کریں کہ وہ پاکستان کے ساتھ جانا چاہتے ہیں یا پھر ہندوستان کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں۔ یہ حق کشمیر کے لوگوں کو اب تک نہیں ملا ہے’۔ عمران خان نے کہا کہ اس کا حل صرف یہی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 04, 2020 11:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading