ہوم » نیوز » عالمی منظر

چین سے گھبرائے عمران خان، پاکستان نے 13دن میں ہی پب جی پر سے پابندی ہٹائی

بتا دیں کہ پاکستان ٹیلی کمیونکیشن اتھارٹی نے جمعرات کو پراکسیما بیٹا کمپنی سے گیمنگ پلیٹ فارم کے غلط استعمال کو روکنے کی یقین دہانی کے بعد پب جی پر سے پابندی ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا۔

  • Share this:
چین سے گھبرائے عمران خان، پاکستان نے 13دن میں ہی پب جی پر سے پابندی ہٹائی
چین سے گھبرائے عمران خان، پاکستان نے 13دن میں ہی پب جی پر سے پابندی ہٹائی

اسلام آباد۔ چین (China) کے بڑھتے دباو کے سامنے عمران خان (Imran Khan) حکومت کو ایک بار پھر جھکنا پڑا ہے۔ صرف 13 دنوں کے اندر ہی عمران خان کی حکومت نے آن لائن ملٹی پلیئر گیم پب جی (PUBG) پر عائد پابندی فوری طور پر ہٹا دی ہے۔ 17جولائی کو پاکستان حکومت نے اس گیم کو اسلام مخالف بتاتے ہوئے اس پر پابندی عائد کر دی تھی لیکن اب کہا گیا ہے کہ کمپنی کی طرف سے بھروسہ دلایا گیا ہے جس سے حکومت مطمئن ہے۔



بتا دیں کہ پاکستان ٹیلی کمیونکیشن اتھارٹی نے جمعرات کو پراکسیما بیٹا کمپنی کی طرف سے گیمنگ پلیٹ فارم کے غلط استعمال کو روکنے کی یقین دہانی کے بعد پب جی پر سے پابندی ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ایسا مانا جا رہا ہے کہ ہندستان اور دیگر کئی ملکوں میں پہلے ہی چینی کمپنیاں کئی طرح کی پابندیاں جھیل رہی ہیں ایسے میں قریبی پارٹنر پاکستان کے پب جی پر پابندی عائد کرنے سے غلط پیغام جا رہا تھا۔ پب جی کی پیرنٹ کمپنی پراکسیما بیٹا کے نمائندوں نے گیمنگ پلیٹ فارم کے غلط استعمال کو روکنے کے لئے اٹھائے گئے اقدامات پر پی ٹی اے نے عدم اطمینان ظاہر کرتے ہوئے پابندی ہٹانے کا حکم جاری کر دیا ہے۔

پب جی پر پابندی عائد کرنے کے لئے پاکستان ٹیلی کمیونکیشن اتھارٹی نے ہی عدالت میں ثبوت دئیے تھے اور کہا تھا کہ اس آن لائن گیم کی وجہ سے نوجوان نہ صرف ذہنی دباو میں ہیں بلکہ اس کے کئی اور بھی سنگین نتائج سامنے آئے ہیں۔ پی ٹی اے نے کہا تھا کہ اس گیم کے دباو کے پیش نظر پاکستان میں کئی نوجوانوں کی خودکشی کے معاملے بھی سامنے آئے ہیں۔ اتھارٹی نے عدالت میں دلیل دی تھی کہ پب جی گیم میں کچھ مناظر اسلام مخالف ہوتے ہین جنہیں پاکستان میں اجازت نہیں دی جا سکتی ہے۔ حالانکہ ایسا مانا جا رہا تھا کہ پاکستان میں نوجوانوں نے اس پابندی کی سخت مخالفت کی تھی اور ٹوئٹر پر پابندی کے خلاف ہیش ٹیگ بھی چلایا تھا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jul 31, 2020 11:42 AM IST