ہوم » نیوز » عالمی منظر

پلوامہ کو لےکر عمران خان کے وزیر نےکھول دی اپنی پول، ہنگامہ ہوا تو بدل دیا بیان

عمران خان حکومت میں وزیر فواد چودھری کا یہ بیان ایسے وقت آیا ہے، جب پاکستان کی اپوزیشن پارٹی پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل- این) کے لیڈر سردار ایاز صادق نے بتایا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےکہا تھا کہ اگر ہندوستانی فوج کے ونگ کمانڈر ابھینندن ورھمان کو نہیں چھوڑا جاتا توہندوستان ’رات نو بجے’ پاکستان پر حملہ کردے گا’۔

  • Share this:
پلوامہ کو لےکر عمران خان کے وزیر نےکھول دی اپنی پول، ہنگامہ ہوا تو بدل دیا بیان
پلوامہ کو لےکر عمران خان کے وزیر نے کھولی اپنی ہی پول، ہنگامہ ہوا تو بدل دیا بیان

اسلام آباد: پاکستان (Pakistan) نے جموں وکشمیر (Jammu Kashmir) کے پلوامہ (Pulwama) میں 2019 میں ہوئے دہشت گردانہ حملے (Pulwama Terrorist Attack) میں اپنے کردار کا اعتراف کرلیا ہے۔ پلوامہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں سی آر پی ایف (CRPF) کے 40 جوان شہید ہوگئے تھے۔ پاکستان کے ایک وزیر نے ملک کی پارلیمنٹ میں کہا کہ عمران خان (Imran Khan) کے دور میں پلوامہ کا  حادثہ سب سے بڑی حصولیابی رہی ہے۔ پاکستان کے وزیر فواد چودھری (Fawad Chaudhary) نے کہا کہ ہم نے ہندوستان کو گھس کر مارا۔ چودھری نے کہا، ’پلوامہ میں ہماری کامیابی، عمران خان کی حکومت میں لوگوں کی کامیابی ہے۔ ہم اور آپ اس کامیابی کے حصہ دار ہیں’۔


فواد چودھری کے اس بیان پر پارلیمنٹ میں ہنگامہ ہونے لگا، تب عمران خان کے وزیر نے اپنے بیان کو بدلتے ہوئے کہا کہ ’پلوامہ کے واقعہ کے بعد جب ہم نے انڈیا کو گھس کر مارا’۔ اس بیان کے بعد فواد چودھری نے نیوز 18 سے ایکسکلوزیو بات چیت میں کہا کہ جو میں نے بیان دیا تھا، وہ پلوامہ حملے کے بعد کے ایکشن کی ضمن میں کہا تھا، لیکن ہم ہندوستان کو جنگ کے لئے اکسا نہیں رہے ہیں۔ وہ لمبی تقریر تھی اور میں نے نہیں کہا تھا کہ پلوامہ حملہ پاکستان نے کیا تھا۔




فواد چودھری کا یہ بیان ایسے وقت میں آیا ہے، جب پاکستان کی اپوزیشن پارٹی پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل- این) کے لیڈر سردار ایاز صادق نے کہا تھا کہ ونگ کمانڈر ابھینندن کو پکڑے جانے کے بعد جب فروری 2019 میں پاکستانی پارلیمانی کمیٹی کی میٹںگ ہوئی تو اس میں وزیر اعظم عمران خان آئے ہی نہیں اور وہاں کے فوجی سربراہ قمرجاوید باجوا کے پاوں کانپ رہے تھے اور پسینے چھوٹ رہے تھے۔

اپوزیشن پارٹی کے لیڈر نے کھولی پول

پاکستان کے ایک سینئر اپوزیشن لیڈر نےکہا ہے کہ ایک میٹنگ میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا تھا کہ اگر ہندوستانی فضائیہ فوج کے ونگ کمانڈر ابھینندن وردھمان کو نہیں چھوڑا جاتا تو ہندوستان ’رات نو بجے’ پاکستان پر حملہ کردے گا۔ اپوزیشن لیڈر کے مطابق، جب شاہ محمود قریشی کہہ رہے تھے تب پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوا کے پسینے چھوٹ رہے تھے اور ان کے ’پیر کانپ رہے تھے’۔ صادق کے مطابق، قریشی نے کہا، اللہ کے واسطے ہمیں اسے چھوڑ دینا چاہئے’۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 29, 2020 08:21 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading