ہوم » نیوز » عالمی منظر

نوازشریف کا علاج پاکستان میں ممکن نہیں، بیرون ملک بھیجنے کی ضرورت

بدعنوانی کے معاملہ میں سزا بھگت رہے پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے وکیل نے اسلام آباد ہائی کورٹ کو بتایا کہ ان کا موکل مختلف بیماریوں کا شکار ہے اور علاج صرف بیرون ملک میں ہو سکتا ہے لہذا اسے ضمانت دی جانی چاہئے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 20, 2019 01:27 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نوازشریف کا علاج پاکستان میں ممکن نہیں، بیرون ملک بھیجنے کی ضرورت
بدعنوانی کے معاملہ میں سزا بھگت رہے پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے وکیل نے اسلام آباد ہائی کورٹ کو بتایا کہ ان کا موکل مختلف بیماریوں کا شکار ہے اور علاج صرف بیرون ملک میں ہو سکتا ہے لہذا اسے ضمانت دی جانی چاہئے۔

بدعنوانی کے معاملہ میں سزا بھگت رہے پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے وکیل نے اسلام آباد ہائی کورٹ کو بتایا کہ ان کا موکل مختلف بیماریوں کا شکار ہے اور علاج صرف بیرون ملک میں ہو سکتا ہے لہذا اسے ضمانت دی جانی چاہئے۔

وکیل خواجہ حارث نے بدھ کو نواز کی ضمانت کی درخواست پر سماعت کے دوران عدالت میں کہا کہ انہیں ذیابیطس، بلڈ پریشر اور كارڈيووسكلر جیسی بیماریاں ہیں اور ان کی جان کو خطرہ ہے۔ ایڈووکیٹ نے کہا کہ مختلف بیماریوں کی وجہ سے سابق وزیر اعظم ذہنی طور پرپریشان رہتے ہیں۔

معاملے کی سماعت کر رہی جج عمر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی کی بنچ نے قومی احتساب بیورو (نیب) کے ڈائرکٹر جنرل عرفان منگي کی جانب سے نواز کی ضمانت پر جواب دینے میں تاخیر پر ناراضگی ظاہر کی۔

First published: Jun 20, 2019 01:27 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading