اپنا ضلع منتخب کریں۔

    پاکستان کے نئے آرمی چیف سید عاصم منیر نے ہندوستان کے خلاف کی زہرافشانی،جانئے کیا کہا؟

    جنرل عاصم منیرکو کنٹرول لائن کی تازہ ترین صورتحال پربریفنگ دی گئی۔

    جنرل عاصم منیرکو کنٹرول لائن کی تازہ ترین صورتحال پربریفنگ دی گئی۔

    جنرل عاصم نے کہا کہ انہوں نے حال ہی میں گلگت، بلتستان اورپی او کے ہندوستانی حکومت کے انتہائی غیر ذمہ دارانہ بیانات کانوٹس لیاہے۔ سی او اے ایس نے کہا کہ میں یہ واضح کردوں کہ پاکستان کی مسلح افواج نہ صرف اپنی مادروطن کے 1-1انچ کے دفاع کے لیے تیارہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Pakistan
    • Share this:
      پاکستان کے نئے آرمی چیف جنرل سیدعاصم منیر نے ہندوستان کے خلاف زہرافشانی کی ہے۔ سینچریعنی 3 دسمبرکو ایک اشتعال انگیز بیان دیتے ہوئے جنرل عاصم منیر نے کہا کہ ہندوستان اپنے مذموم عزائم میں کبھی کامیاب نہیں ہوگااوراسے کسی بھی حرکت کا منہ توڑ جواب دیاجائے گا۔ پاک فوج کے میڈیا ونگ کے مطابق آرمی چیف نے سنیچر کو لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے رکھ چکری سیکٹرمیں سرحدی علاقوں کا دورہ کیا اور فوجیوں سے بات چیت کے دوران یہ ریمارکس دیئے۔

      جنرل عاصم منیرکو کنٹرول لائن کی تازہ ترین صورتحال پربریفنگ دی گئی۔افسروں اورجوانوں سے بات چیت کرتے ہوئے آرمی چیف نے مشکل حالات میں اپنے فرائض کی انجام دہی کے دوران ان کے بلند حوصلے، پیشہ ورانہ اہلیت اورجنگی تیاریوں کو سراہا۔

      پاکستان کے نئے آرمی چیف نے کیا کہا؟


      جنرل عاصم نے کہا کہ انہوں نے حال ہی میں گلگت، بلتستان اورپی او کے ہندوستانی حکومت کے انتہائی غیر ذمہ دارانہ بیانات کانوٹس لیاہے۔ سی او اے ایس نے کہا کہ میں یہ واضح کردوں کہ پاکستان کی مسلح افواج نہ صرف اپنی مادروطن کے 1-1انچ کے دفاع کے لیے تیارہیں بلکہ دشمن کے ساتھ کسی بھی قسم کی جنگ لڑنے کے لیے بھی تیار ہیں۔

      انہوں نے کہا کہ ہندوستان اپنے مذموم عزائم کو کبھی پورا نہیں کرسکے گا۔ دنیاانصاف کویقینی بنائے اوراقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیری عوام سے کیاگیاوعدہ پورا کرے۔

      پہلے آرمی چیف کااستقبال کور کمانڈرراولپنڈی لیفٹیننٹ جنرل شاہد امتیازنے کیا۔ آئی ایس آئی کے سابق سربراہ جنرل عاصم منیر نے جنرل قمرجاوید باجوہ کی جگہ لی ہے۔ جو پاکستان کے آرمی چیف کے طور پر خدمات انجام دینے کے بعد 29 نومبر کو ریٹائرہوئے۔

      یادرہے کہ جنرل منیر آئی ایس آئی کے سربراہ بننے سے پہلے شمالی علاقہ جات کے کمانڈر اور ملٹری انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر جنرل بھی رہ چکے ہیں۔ وہ جموں و کشمیر کے ہر کونے سے واقف ہے۔ جنرل باجوہ کے کہنے پر جب انہیں آئی ایس آئی کا سربراہ بنایا گیا تو عسکری ماہرین نے اسے ہندوستان کے خلاف ایک بڑی سازش کا حصہ قرار دیا۔

      منیر کو کشمیر کا ماہر بھی کہا جاتا ہے۔ منیر باجوہ اور ملکی حکومت کے سامنے خود کو آئی ایس آئی کا بہترین باس ثابت کرنا چاہتا تھے۔دفاعی ماہرین کا یہ دعویٰ ہے کہ کشمیر کے ہر حصے سے واقف منیر نے اپنے تجربے سے فائدہ اٹھاتے ہوئے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو انجام دینے میں جیش محمد کی مدد کی۔
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: