உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan کے پیراملیٹری فورس کیمپ پر حملہ ، 6 سیوکرٹی اہلکاروں کی موت اور 22 زخمی

    Pakistan کے پیراملیٹری فورس کیمپ پر حملہ ، 6 سیوکرٹی اہلکاروں کی موت اور 22 زخمی  (AP)

    Pakistan کے پیراملیٹری فورس کیمپ پر حملہ ، 6 سیوکرٹی اہلکاروں کی موت اور 22 زخمی (AP)

    Pakistan Terrorist Attack: ضلع پولیس افسر وقار احمد خان نے بتایا کہ دہشت گردوں نے جنوبی وزیرستان کی سرحد سے متصل خیبر پختونخوا صوبہ کے ٹینک ضلع میں ایف سی لائن پر حملہ کیا ۔ انکاونٹر میں تین حملہ آور بھی مارے گئے ۔

    • Share this:
      اسلام آباد : پاکستان کے خیبر پختونخوا صوبہ میں ایک قلعہ کے اندر واقع سیکورٹی صدر دفتر پر بدھ کو دہشت گردانہ حملہ میں کم از کم چھ سیکورٹی اہلکاروں کی موت ہوگئی اور 22 دیگر زخمی ہوگئے ۔ ضلع پولیس افسر وقار احمد خان نے بتایا کہ دہشت گردوں نے جنوبی وزیرستان کی سرحد سے متصل خیبر پختونخوا صوبہ کے ٹینک ضلع میں ایف سی لائن پر حملہ کیا ۔ انکاونٹر میں تین حملہ آور بھی مارے گئے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : پاکستان میں ہندو لڑکی کے اغوا کی کوشش، ناکام رہنے پر سر عام کیا یہ خوفناک کام


       

      یہ بھی پڑھئے : تیرہ سالوں سے گردن کو ایک طرف جھکائے زندگی گزار رہی تھی پاکستانی بچی، 25 لاکھ روپے میں ملی نئی زندگی


      افسر نے بتایا کہ زخمیوں کو اسپتال میں بھرتی کرایا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ٹینک ضلع کی جانب جانے والے سبھی راستوں کو بند کردیا گیا ہے اور حملہ آوروں کی گرفتاری کیلئے علاقہ میں تلاشی مہم چلائی جارہی ہے ۔ پاکستانی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق دہشت گر نوشکی اور پنجگور کے اسٹائل میں حملہ کررہے تھے ۔


      نوشکی اور پنجگور میں کئی دنوں تک دہشت گرد کیمپ کے اندر ہی چھپے رہے تھے اور انہوں نے درجنوں فوجیوں کو مات کے گھاٹ اتار دیا تھا ۔ ایسا بتایا جارہا ہے کہ یہ حملہ آور خطرناک امریکی ہتھیاروں سے لیس تھے ۔ تین دہشت گردوں کی لاشیں جائے واقعہ سے برآمد کی گئی ہیں ۔

      انتظامیہ کی طرف سے علاقہ میں جانے والے سبھی راستوں پر رکاوٹیں کھڑی کردی گئی ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: