உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عالمی عدالت کے حکم کے بعد  اب کلبھوشن جادھو کو قونصلر رسائی فراہم کرائے گا پاکستان ، نامعلوم جگہ پر کیا منتقل

    كلبھوشن جادھو: فائل فوٹو۔

    كلبھوشن جادھو: فائل فوٹو۔

    پاکستان کلبھوشن جادھو کو قونصلر رسائی مہیا کرائے گا ۔ گزشتہ ماہ انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس نے پاکستان کو حکم دیا تھا کہ وہ انہیں قونصلر رسائی فراہم کرائے ۔

    • Share this:
      پاکستان کلبھوشن جادھو کو قونصلر رسائی مہیا کرائے گا ۔ گزشتہ ماہ انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس نے پاکستان کو حکم دیا تھا کہ وہ انہیں قونصلر رسائی فراہم کرائے ۔ فی الحال ہندوستان کی طرف سے اس پر کوئی رد عمل ظاہر نہیں کیا گیا ہے ۔ اس سے پہلے پاکستان مسلسل کلبھوشن جادھو کو سفارتی مدد دینے سے انکار کرتا رہا تھا ۔ لیکن معاملہ جب عالمی عدالت میں گیا تو آخر کار پاکستان کو بات ماننی پڑ گئی ۔

      گزشتہ ماہ عالمی عدالت نے کہا تھا کہ کلبھوشن جادھو کی موت کی سزا پر روک برقرار رہے گی ۔ آئی سی جے نے کہا تھا کہ پاکستان کی فوجی عدالت میں انہیں قصوروار ٹھہرانے اور انہیں دی گئی سزا پر از سر نو غور کرنے کی ضرورت ہے ۔ آئی سی جے نے معاملہ میں پاکستان کے اعتراض کو خارج کردیا تھا ۔ ساتھ ہی ساتھ ان کی اس دلیل کو بھی خارج کردیا تھا کہ ہندوستان نے جادھو کی حقیقی شہریت کی جانکاری نہیں دی ۔

      قابل ذکر ہے کہ پاکستان نے جادھو کو مارچ 2016 میں گرفتار کیا تھا اور اپریل 2017 میں پاکستان کی فوجی عدالت نے انہیں ہندوستانی جاسوس اور دہشت گرد بتاکر موت کی سزا سنائی تھی ۔

      حال ہی میں ذرائع میں بتایا تھا کہ جادھو کو لاہور سے باہر کسی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے ۔ مانا جارہا ہے کہ قونصلر رسائی سے پہلے کلبھوشن جادھو کو کسی سب جیل میں رکھا جاسکتا ہے ، جہاں لاہور سے بہتر حالات ہوں اور پاکستان اس بات کا دکھاوا کرسکے کہ اس نے جادھو کو اچھی سہولیات مہیا کرائی ہیں ۔ وہیں قونصلر رسائی دینے سے پہلے پاکستان کی یہ کوشش بھی ہوگی کہ جادھو کی صحت میں کچھ بہتری آسکے ۔

       
      First published: