ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان کے اپوزیشن لیڈران بولے، Coronavirus   بحران کی گھڑی میں ہم ہندستان کے ساتھ ہیں

پاکستان کے اپوزیشن لیڈرا نے بھی کورونا وبا سے لڑ رہے ہندوستانی عوام کیلئے یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔ پاکستان کی قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے اتوار کے روز ٹویٹ کیا کہ موت اور بیماری کے وقت انسانیت، مذہب اور قوم سے بالاتر ہے۔ پی ایم ایل این کے نائب صدر اور پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی مریم نواز نے کہا کہ ہندستان میں دل دہلانے والے مناظر دیکھنے کو ملے ہیں۔ اللہ ہم سب پر رحم کرے آمین۔

  • Share this:
پاکستان کے اپوزیشن لیڈران بولے، Coronavirus   بحران کی گھڑی میں ہم ہندستان کے ساتھ ہیں
پاکستان کے اپوزیشن لیڈرا نے بھی کورونا وبا سے لڑ رہے ہندوستانی عوام کیلئے یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔

اسلام آباد: کورونا Coronavirus  سے پیدا ہوئے بحران میں ملک کی مدد کیلئے سب ہاتھ بڑھا رہے ہیں۔ اسی پہر میں پاکستان نے بھی ہندوستان کی مدد کی پیشکش کی ہے۔ ادھر  ہمسایہ ملک پاکستان کے اپوزیشن لیڈرا نے بھی کورونا وبا سے لڑ رہے  ہندوستانی عوام کیلئے  یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ دونوں ممالک مل کر کورونا بحران سے نکیں گے۔ نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز  نے بھی اللہ سے اس بحران کو دور کرنے کی دعا کی ہے۔ عمران خان حکومت نے ایک دن پہلے ہی ہندوستان کی مدد کی پیش کش کی تھی۔


پاکستان کی قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے اتوار کے روز ٹویٹ کیا کہ موت اور بیماری کے وقت  انسانیت، مذہب اور قوم سے بالاتر ہے۔ ہم  کووڈ ۔19 سے بری طرح متاثر ہوئے ہندوستان کے عوام کے لئے دعا کرتے ہیں۔ امید ہے کہ سمجھداری سے کام لیا جائے گا اور جنوبی ایشیائی ممالک ایک دوسرے کو تباہ کرنے پر اربوں روپے خرچ کرنے کے بجائے اپنے لوگوں کی صحت کی دیکھ بھال کو یقینی بنانے پر توجہ مرکوز کرسکیں گے۔


پی ایم ایل این کے نائب صدر اور پاکستان  کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی مریم نواز نے کہا کہ ہندستان میں دل دہلانے والے مناظر دیکھنے کو ملے ہیں۔ اللہ ہم سب پر رحم کرے آمین۔




پاکستان کے وزیر اعظم نے لکھا : میں ہندوستان کے لوگوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنا چاہتا ہوں کیونکہ وہ کورونا کی خطرناک لہر کا سامنا کررہے ہیں ۔ پڑوس اور دنیا میں وبا میں مبتلا لوگوں کے جلد صحتمند ہونے کی ہماری دعا ان کے ساتھ ہے ۔ ہمیں انسانیت کے خلاف پیدا ہوئے اس عالمی چیلنجر کا مل کر سامنا کرنے کی ضرورت ہے ۔


پاکستانی وزیر اعظم کے علاوہ پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی متاثرہ کنبوں کیلئے پیغام بھیجا ۔ انہوں نے لکھا : ہمارے خطہ کو متاثر کرنے والے کورونا وائرس کی موجودہ لہر کے پیش نظر ہم ہندوستان کے لوگوں کے تئیں اپنی حمایت کا اظہار کرتے ہیں ۔ انہوں نے لکھا کہ میں پاکستان کے لوگوں کی جانب سے ہندوستان میں متاثرہ کنبوں کے تئیں ہمدردی رکھتا ہوں ۔

پاکستان میں بھی درج ہوئے ریکارڈ معاملات
پاکستان نے بھارت کو کوڈ ۔19 کی مہلک لہر سے لڑنے میں مدد کے لئے وینٹیلیٹر اور دیگر امدادی سامان فراہم کرنے کی پیش کش کی ہے۔ کوروناوائرس کے اس دور میں پاکستان نے ہندوستان کی جانب مدد کاہاتھ بڑھایاہے۔ ہندوستان کے عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور پرتعان کےلیے پاکستان آگے آیاہے۔ پاکستان نے وینٹی لیٹرس، پی پی ای، ڈیجیٹل ایکسرے مشینس جیسی طبی اشیاء دینے کی پیش کش کی ہے ۔پاکستان کی جانب سے کہا گیا ہے کہ اس طرح سے پاکستان اور ہندوستان کے متعلقہ حکام امدادی سامان کی فوری فراہمی کے لئے طریق کار پر کام کرسکتے ہیں۔کورواناوئرس سے لاحق چیلنجوں کو کم کرنے کے لیے مزید تعاون کے ممکنہ طریقوں پر بھی کام کیاجاسکتاہے۔

کورونا سے متاثرہ مریضوں کے لیے ادویات، آکسیجن اور اسپتال میں بستروں کی دستیابی سے متعلق ان کے اہل خانہ کی مدد کی جائے۔ یہ اور اس طرح کے جذبات ہندوستانی عوام کے ساتھ ساتھ پاکستان کے عام شہریوں میں بھی نظر آرہے ہیں اور وہ ٹوئٹر پر ہندوستان سے یکجہتی، ہمدردی اور مدد سے متعلق ٹوئٹس بھی کررہے ہیں۔


سرحدی تفریق اور دو الگ الگ ملک ہونے کے باوجود بھی پاکستان کے عوام نے ہندوستان میں کورونا سے لڑرہے مریضوں، ان کے افراد خاندان اور کوونا سے وفات شدہ افراد کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا اور انھیں تعزیت بھی پیش کررہے ہیں۔ انھوں نے کووڈ۔19 کی دوسری لہر کی شدت سے نکلنے کے لئے دعاووں اور نیک تمناؤں کی پیش کش کی ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان کی سب سے بڑی فلاحی و رفاہی تنظیم ایدھی فاؤنڈیشن (Edhi Foundation) نے وزیراعظم نریندر مودی (Narendra Modi) کو خط لکھ کر مدد کی پیش کش کی ہے۔

پاکستان میں ایدھی فاؤنڈیشن کا آغاز رفاہی کاموں کے لیے مشہور اور فلینتراپسٹ عبد الستار ایدھی مرحوم نے کیا تھا۔ ایدھی فاؤنڈیشن نے جمعہ کو وزیراعظم مودی کو خط لکھا اور اس بحران پر قابو پانے کے لئے ہندوستان کو 50 ایمبولینسوں کی پیش کش کی۔

اس کے علاوہ پڑوسی ملک سے تعلق رکھنے والے ٹوئٹر صارفین نے پاکستان اسٹانڈ ویتھ انڈیا (#PakistanstandswithIndia) بھی ٹرینڈ کر رہا ہے۔ انھوں نے کورونا وائرس میں مبتلا ہندوستانیوں کی صحت و عافیت کے لیے ایک ساتھ ریلی نکالی۔ انہوں نے اپنے حکام سے بھی اپیل کی کہ وہ ہر طرح سے مدد فراہم کریں۔








ہندوستانیوں نے بھی ٹویٹس کا نوٹ لیا اور ان کے خوبصورت اشاروں پر ان کا شکریہ ادا کیا۔ ہفتے کے روز پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے ہندوستان میں عوام سے یکجہتی کا اظہار کیا اور کہا کہ دونوں ملکوں کو مل کر انسانیت کا سامنا کرنے والے عالمی چیلینج کا مقابلہ کرنا ہوگا۔

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی متاثرہ خاندانوں سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا۔
Published by: Sana Naeem
First published: Apr 26, 2021 03:19 PM IST