உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان میں Imran Khan کو بڑی راحت، 15 الگ الگ معاملوں میں ملی عبوری ضمانت

    پاکستان میں جمعہ کے روز ڈسٹرکٹ اور سیشن کورٹ کے جج کامران بشارت مفتی کی عدالت میں سماعت کے دوران عمران خان اپنے وکیل بابر آوان کے ساتھ پیش ہوئے۔ جج نے وکیلوں کی دلیلیں سننے کے بعد عمران خان کے خلاف کراچی کمپنی میں درج 15 الگ الگ معاملوں میں عبوری ضمانت دے دی۔

    پاکستان میں جمعہ کے روز ڈسٹرکٹ اور سیشن کورٹ کے جج کامران بشارت مفتی کی عدالت میں سماعت کے دوران عمران خان اپنے وکیل بابر آوان کے ساتھ پیش ہوئے۔ جج نے وکیلوں کی دلیلیں سننے کے بعد عمران خان کے خلاف کراچی کمپنی میں درج 15 الگ الگ معاملوں میں عبوری ضمانت دے دی۔

    پاکستان میں جمعہ کے روز ڈسٹرکٹ اور سیشن کورٹ کے جج کامران بشارت مفتی کی عدالت میں سماعت کے دوران عمران خان اپنے وکیل بابر آوان کے ساتھ پیش ہوئے۔ جج نے وکیلوں کی دلیلیں سننے کے بعد عمران خان کے خلاف کراچی کمپنی میں درج 15 الگ الگ معاملوں میں عبوری ضمانت دے دی۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیر اعظم اور پی ٹی آئی صدر عمران خان کو 15 معاملوں میں 6 جولائی تک عبوری ضمانت مل گئی ہے۔ جمعہ کو ڈسٹرکٹ اور سیشن کورٹ کے جج کامران بشارت مفتی کی عدالت میں سماعت کے دوران عمران خان اپنے وکیل بابر آوان کے ساتھ پیش ہوئے۔ جج نے وکیلوں کی دلیلیں سننے کے بعد عمران خان کے خلاف کراچی کمپنی میں درج 15 الگ الگ معاملوں میں عبوری ضمانت دے دی۔ ان کے خلاف پاکستان کے الگ الگ شہروں کے تھانوں میں کیس درج ہے۔

      عمران خان پر یہ کیس اقتدار سے ہٹائے جانے کے بعد پی ٹی آئی حامیوں کے احتجاجی مظاہرہ کو اکسانے کے الزام میں درج ہوئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی عدالت نے مقامی پولیس کو گرفتاری کرنے سے روک دیا ہے۔ عدالت نے ان معاملوں کا ریکارڈ مانگا ہے۔ اب کیس پر 6 جولائی کو سماعت ہوگی۔

      کئی اہم معاملوں میں ملزم ہیں عمران خان

      پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان فساد بھڑکانے اور ملک سے غداری جیسے سنگین معاملوں کے ساتھ تقریباً دو درجن سے زیادہ معاملوں میں ملزم ہیں۔ اس معاملے پر شہباز شریف حکومت میں وزیر رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ ایک جمہوری سماج میں کوئی ایسا شخص کسی سیاسی پارٹی کا سربراہ کیسے بن سکتا ہے جو لوگوں کو اکسانے کا کام کرتا ہو، جس نے اپنے مخالفتین کو ملک کا غدار بتاتے ہوئے اخلاقی اور جمہوری اقدار کو طاق پر رکھ دیا ہو۔ انہوں نے کہا کہ عدالت نے جو ان کو مثبت ضمانت مدت دی ہے، اس کے ختم ہونے کے بعد انہیں گرفتار کرلیا جائے گا۔

      عمران خان کے قتل کی سازش کی افواہ

      ان سب کے درمیان عمران خان کے قتل کی سازش کی افواہوں کا دور جاری ہے۔ اس کے سبب اسلام آباد پولیس نے کہا ہے کہ شہر کے بنی گالا کے پاس کے علاقوں میں سیکورٹی ایجنسیوں کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔ اسلام آباد میں دفعہ 144 پہلے ہی نافذ کردی گئی ہے۔ اسلام آباد پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ اسلام آباد میں لوگوں کے اکٹھا ہونے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ اس معاملے کی جانکاری اسلام آباد پولیس نے ٹوئٹ کرکے دی ہے۔

      اپنے ٹوئٹ میں پولیس نے کہا ہے کہ پاکستان کے سابق وزیر اعظم عمران خان کے گھر کے علاقے میں بنی گالا میں ان کے آنے کی جانکاری کے مطابق، علاقے میں سیکورٹی بڑھا دی گئی ہے اور ہائی الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ حالانکہ عمران خان کی ٹیم کی واپسی کو لے کر پولیس کو کوئی پختہ جانکاری نہیں ملی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: