உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران خان نے اقتدار میں واپسی کے لئے اٹھایا یہ بڑا قدم، قانون کی منظوری کے بوکھلایا اپوزیشن

    پاکستانی وزیراعظم عمران خان- فائل فوٹو

    پاکستانی وزیراعظم عمران خان- فائل فوٹو

    Pakistan Parliament Approves Electronic Voting: پاکستانی پارلیمنٹ (Pakistan Parliament) نے بدھ کو الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے متعلق نیا قانون (New Law) منظور کردیا۔ اس قانون کو لے کر اپوزیشن جماعتوں نے عمران حکومت کی زبردست تنقید کی ہے۔ قانون کی مخالفت میں اپوزیشن احتجاج کرتا رہا ہے۔

    • Share this:
      اسلام آباد: پاکستانی پارلیمنٹ (Pakistan Parliament) نے بدھ کو الیکٹرانک ووٹنگ مشین سے متعلق نیا قانون (New Law) منظور کردیا۔ اس قانون کو لے کر اپوزیشن جماعتوں نے عمران حکومت کی زبردست تنقید کی ہے۔ قانون کی مخالفت میں اپوزیشن احتجاج کرتا رہا ہے۔ اپوزیشن کے اراکین نے ایوان میں نئے قانون کی کاپیاں پھاڑیں اور عمران خان کو ’ووٹ چور‘ قرار دیا ہے۔ پاکستان میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا ہے کہ میرے مطابق، یہ پاکستان کے جمہوری تاریخ کا سب سے کالا دن ہے۔ ہم اس قانون کی مذمت کرتے ہیں۔

      عمران خان حکومت کو ملی اکثریت

      تجویز کے حق میں حکومت کو 223 ووٹوں کی حمایت حاصل ہوئی تو اپوزیشن کے حصے میں کل 203 ووٹ ہی آئے۔ دراصل عمران خان حکومت گزشتہ چار ماہ سے اس بل کو منظور کروانی چاہتی تھی۔ اس بل کے پاس ہونے کے بعد اب بیرون ممالک میں رہنے والے 90 لاکھ پاکستانیوں کو آن لائن ووٹنگ کا حق مل گیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ بیرون ممالک میں رہنے والے پاکستانیوں کے درمیان عمران خان کی اچھی خاصی فین فالوئنگ ہے اور اسی کے پیش نظر نیا قانون لایا گیا ہے۔ ملک میں 2023 میں عام انتخابات ہونے ہیں۔

      آئی ایس آئی کے نئے چیف ندیم انجم کی تقرری سے متعلق عمران خان اور جنرل قمر جاوید باجوا کے درمیان لمبا تنازعہ چلا ہے۔
      آئی ایس آئی کے نئے چیف ندیم انجم کی تقرری سے متعلق عمران خان اور جنرل قمر جاوید باجوا کے درمیان لمبا تنازعہ چلا ہے۔


      ماہرین کی رائے، عمران خان کی اقتدار میں واپسی بے حد مشکل

      پاکستانی ماہرین کا کہنا ہے کہ عمران خان کی اقتدار میں دوبارہ واپسی بے حد مشکل ہے۔ عمران خان حکومت میں پاکستان کی معیشت بری طرح چرمرائی ہوئی ہے اور مہنگائی عروج پر ہے۔ ساتھ ہی نئے آئی ایس آئی چیف ندیم انجم کی تقرری کے سبب عمران خان اور آرمی جنرل قمر جاوید باجوا کے درمیان اختلاف کی خبریں بھی سامنے آئی تھیں۔

      عمران اور پاکستانی فوج میں اختلاف

      دراصل، پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے نئے چیف ندیم انجم کی تقرری سے متعلق عمران خان اور جنرل باجوا کے درمیان لمبا تنازعہ چلا ہے۔ پاکستانی وزیر اعظم فیض حامد کو ابھی خفیہ ایجنسی کا سربراہ بنائے رکھنا چاہتے تھے، لیکن آرمی چیف نے اس بات سے واضح طور پر انکار کردیا۔ بعد میں عمران خان کو آرمی چیف کے سامنے جھکنا پڑا ہے۔

       پاکستانی ماہرین کا کہنا ہے کہ عمران خان کی اقتدار میں دوبارہ واپسی بے حد مشکل ہے۔

      پاکستانی ماہرین کا کہنا ہے کہ عمران خان کی اقتدار میں دوبارہ واپسی بے حد مشکل ہے۔


      یہ بھی پڑھیں۔

      پاکستانی فوج سے ناراضگی عمران خان ’ذلت‘ کا سبب، وزیر اعظم عہدے سے چھٹی طے 


      عمران خان کو سبق سکھانے کے لئے پاکستانی فوج کا بڑا قدم، سابق وزیر اعظم نواز شریف کا استقبال کرنے کےلئے تیار


      آرمی اور عمران خان میں ملی بھگت کا الزام

      اپوزیشن کا پہلے سے الزام رہا ہے کہ سال 2018 میں عمران خان کو اقتدار میں لانے کے پیچھے آرمی کا بڑا ہاتھ رہا ہے۔ حالانکہ اس الزام سے حکومت اور آرمی دونوں ہی انکار کرتے رہے ہیں۔ اب اپوزیشن نے نیا قانون پاس ہونے ے بعد کہا ہے کہ وہ اسے سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: