உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران خان کی گیدڑ بھبھکی ، آرٹیکل 370 ہٹانے کے فیصلہ کی وجہ سے ہندوستان میں ہوں گی پلوامہ جیسی وارداتیں

    آرٹیکل 370 ہٹانے سے ہندوستان میں ہوں گی پلوامہ جیسی وارداتیں : عمران خان

    آرٹیکل 370 ہٹانے سے ہندوستان میں ہوں گی پلوامہ جیسی وارداتیں : عمران خان

    پاکستان ہندوستان کے داخلی معاملات میں مداخلت کرنے سے کبھی باز نہیں آتا ہے ۔ اس مرتبہ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں ہندوستان کے خلاف زہر اگلا ہے ۔

    • Share this:
      پاکستان ہندوستان کے داخلی معاملات میں مداخلت کرنے سے کبھی باز نہیں آتا ہے ۔ اس مرتبہ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں ہندوستان کے خلاف زہر اگلا ہے ۔ عمران خان نے پارلیمنٹ سیشن کے دوران گیدر بھبھکی دیتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے کی وجہ ہندوستان میں پلوامہ میں جیسی وارداتیں ہوں گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس معاملہ کو اقوام متحدہ لے کر جائیں گے ۔ ہم بین الاقوامی برادری کو بتائیں گے کہ بی جے پی کی نسل پرستی پر مبنی ذہنیت کی وجہ سے ہندوستان میں اقلیتوں کے ساتھ کیسا برتاو کیا جا رہا ہے ۔

      عمران خان نے آر ایس ایس کو جموں و کشمیر کے مسئلہ کیلئے ذمہ دار ٹھہرایا ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ ماحول میں ہندوستان کے سبھی شہریوں کے حقوق برابر نہیں ہیں ۔ انہوں نے محمد علی جناح کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ جناح نے پہلے ہی بتا دیا تھا کہ غیر منقسم ہندوستان میں کیسے اکثریت ہندو ہندوستانی مسلمانوں کو یرغمال بنا لیں گے ۔


      بتادیں کہ پاکستان نے جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے کے حکومت ہند کے فیصلہ کی مذمت کی ہے ۔ پاکستان نے کہا ہے کہ وہ اس کے خلاف ہر ممکنہ متبادل پر کام کرے گا ۔ یہ ہندوستان کا غیر قانونی اور یکطرفہ قدم ہے ۔

      امریکہ نے سبھی فریقوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی

      ادھر اقوام متحدہ اور امریکہ نے جموں و کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹانے کے مودی حکومت کے فیصلہ کے بعد ہندوستان اور پاکستان سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے ۔ امریکہ نے کہا کہ جموں و کشمیر سے وابستہ اس معاملہ پر اس کی قریبی نظر ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ امریکہ نے سبھی فریقوں سے لائن آف کنٹرول پر امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے ۔
      First published: