உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    VIDEO: پاکستان پھر شرمسار، دہشت گرد مسعود اظہر کے سوال پر بھاگتے نظر آئے وزیر اعظم شہباز شریف

    دہشت گرد مسعود اظہر کے سوال پر بھاگتے نظر آئے وزیر اعظم شہباز شریف

    دہشت گرد مسعود اظہر کے سوال پر بھاگتے نظر آئے وزیر اعظم شہباز شریف

    SCO Summit 2022: اے این آئی کے نامہ نگار نے شہباز شریف سے کہا کہ ’پلیز ایک چھوٹا سا سوال، کیا آپ اقوام متحدہ کے ذریعہ نامزد عالمی دہشت گرد جیش محمد مسعود اظہر کے خلاف کارروائی کریں گے‘۔ ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ شہباز شریف اپنے وفد کے ساتھ جا رہے ہیں، تبھی ان سے سوال کیا جاتا ہے، لیکن وہ اس پر جواب نہیں دینے کا فیصلہ کرتے ہیں اور آگے بڑھ جاتے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      سمرقند: پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف، شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) چوٹی کانفرنس میں حصہ لینے کے لئے سمرقند میں ہیں، انہوں نے جمعہ کے روز اے این آئی نامہ نگار کے ذریعہ جیش محمد (جے ایم) کے دہشت گرد مسعود اظہر پر پوچھے گئے سوال کا جواب دینے سے انکار کردیا۔ اے این آئی نے ٹوئٹر پر ویڈیو بھی شیئر کیا ہے، جس میں وہ ان سوالوں سے دور بھاگتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

      اے این آئی کے نامہ نگار نے شہباز شریف سے کہا کہ ’پلیز ایک چھوٹا سا سوال، کیا آپ اقوام متحدہ کے ذریعہ نامزد عالمی دہشت گرد جیش محمد مسعود اظہر کے خلاف کارروائی کریں گے‘۔ ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ شہباز شریف اپنے وفد کے ساتھ جا رہے ہیں، تبھی ان سے سوال کیا جاتا ہے، لیکن وہ اس پر جواب نہیں دینے کا فیصلہ کرتے ہیں اور آگے بڑھ جاتے ہیں۔ شہباز شریف کے سیکورٹی اہلکاروں نے بھی صحافی کو سوال پوچھنے سے روکنے کی کوشش کی۔ ایک سیکورٹی گارڈ کہتا ہے ’مجھے لگتا ہے کہ یہ کافی ہے‘ْ۔



      جیش محمد ایک دہشت گرد تنظیم ہے، جس نے ہندوستان میں کئی دہشت گردوں کو انجام دیا ہے اور سال 2019 میں جموں وکشمیر میں پلوامہ دہشت گردانہ حملے کی بھی ذمہ داری لی تھی۔ پاکستان 2018 سے فائنانشیل ایکشن ٹاسک فورس (FATF) گرے لسٹ میں ہے۔ دہشت گردانہ سرگرمیوں میں ایف اے ٹی ایف کی جانب سے فنڈز کے بے تحاشہ استعمال پر پاکستان کے ریکارڈ کی مسلسل جانچ پڑتال کی جا رہی ہے۔

      مغربی ممالک کے دباو کے بعد پاکستان نے طالبان کے زیر اقتدار والے افغانستان کو ایف اے ٹی ایف کو مانیٹروں کے ذریعہ مسعود اظہر کی گرفتاری کا مطالبہ کرکے جائزہ سے کچھ دن پہلے ایک خط بھیجا تھا۔ جیش محمد سے متعلق پاکستان اور افغانستان کے درمیان از سرنو سفارتی تنازعہ چل رہا ہے۔ طلوع نیوز کے مطابق بدھ کو طالبانی ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے اس بات سے انکار کیا کہ مسعود اظہر افغانستان میں تھا، اس نے کہا کہ وہ حقیقت میں پاکستان میں ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: