ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان نے اپنی خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ اسد درانی کو بتا دیا ہندستان کا 'جاسوس'

پاکستان نے انٹر۔ سروسیز انٹلی جنس کے سربراہ رہے سبکدوش لیفٹننٹ جنرل اسد درانی کو ہندستان کا جاسوس بتا دیا ہے۔ وزارت دفاع نے درانی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نہیں ہٹانے کی اپیل کی ہے۔

  • Share this:
پاکستان نے اپنی خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ اسد درانی کو بتا دیا ہندستان کا 'جاسوس'
آئی ایس آئی کے سابق سربراہ اسد درانی کی فائل فوٹو

اسلام آباد۔ پاکستان نے انٹر۔ سروسیز انٹلی جنس (ISI) کے سربراہ رہے سبکدوش لیفٹننٹ جنرل اسد درانی (Former ISI chief Asad Durrani) کو ہندستان کا جاسوس بتا دیا ہے۔ وزارت دفاع نے درانی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ECL) سے نہیں ہٹانے کی اپیل کی ہے۔ وزارت دفاع نے عدالت میں داخل ایک جواب میں کہا ہے کہ اس کے پاس اس بات کے پختہ ثبوت ہیں کہ درانی کے 2008 سے ہندستانی خفیہ ایجنسی ریسرچ اینڈ اینالیسس ونگ (RAW) سے رشتے رہے تھے۔


درانی سے بیحد ناراض ہے پاکستان حکومت


دراصل، درانی نے را کے سابق سربراہ رہے امرجیت سنگھ دلت (A S Dulat) کے ساتھ مل کر ' دی اسپائی کرونیکلس: را، آئی ایس آئی اینڈ دی الیوزن آف پیس، نامی ایک کتاب لکھی تھی۔ اس کتاب کے شائع ہونے کے بعد پاکستانی ملٹری انٹلی جنس نے وزارت داخلہ کو ایک مکتوب لکھ کر درانی کا نام ای سی ایل میں رکھنے کی اپیل کی تھی۔ درانی نے اس فیصلے کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں 2019 میں چیلنج کیا تھا۔


وزارت دفاع نے عدالت میں داخل اپنے جواب میں کہا کہ سابق آئی ایس آئی سربراہ کا نام نو فلائی لسٹ میں اس لئے رکھا گیا ہے کیونکہ وہ ملک مخالف سرگرمیوں میں شامل رہے ہیں۔

کتاب سے ہوئی تھی پاکستان کی بدنامی
دلت اور درانی کی ہارپر کالنس سے شائع کتاب کے بعد ایسی کئی معلومات سامنے آئی تھیں جن سے پاکستان کی فوج کافی پریشان ہو گئی تھی۔ کتاب میں درانی کے حوالے سے لکھا گیا ہے کہ دہشت گرد اسامہ بن لادن کی مہم کو لے کر امریکہ اور پاکستان کے درمیان ڈیل ہوئی تھی۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Jan 28, 2021 08:10 PM IST