உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan : سیکورٹی گارڈ نے حاملہ خاتون کے منہ پر ماری لات، وجہ جان کر رہ جائیں گے دنگ! دیکھئے وائرل ویڈیو

    Pakistan : سیکورٹی گارڈ نے حاملہ خاتون کے منہ پر ماری لات، وجہ جان کر رہ جائیں گے دنگ! دیکھئے وائرل ویڈیو ۔ تصویر : ویڈیو گریب

    Pakistan : سیکورٹی گارڈ نے حاملہ خاتون کے منہ پر ماری لات، وجہ جان کر رہ جائیں گے دنگ! دیکھئے وائرل ویڈیو ۔ تصویر : ویڈیو گریب

    Pakistan News: پاکستان کے شہر کراچی میں ایک سیکورٹی گارڈ نے حاملہ خاتون کی پہلے پٹائی کی اور پھر خاتون کے زمین پر گرجانے کے بعد اس کے چہرے پر لات ماری، جس کی وجہ سے خاتون بے ہوش ہوگئی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • pakistan | islamabad | lahore
    • Share this:
      کراچی : پاکستان کے شہر کراچی میں ایک سیکورٹی گارڈ نے حاملہ خاتون کی پہلے پٹائی کی اور پھر خاتون کے زمین پر گرجانے کے بعد اس کے چہرے پر لات ماری، جس کی وجہ سے خاتون بے ہوش ہوگئی۔ اس واقعہ کا ویڈیو جب سوشل میڈیا پر وائرل ہوا تو پولیس نے گارڈ کو گرفتار کر لیا۔ سی سی ٹی وی فوٹیج کے وائرل ہوتے ہی پاکستان میں کھلبلی مچ گئی اور پولیس حرکت میں آگئی۔ پولیس افسر نے بتایا کہ خاتون کی شناخت ثنا کے طور پر ہوئی ہے۔ سیکورٹی گارڈ خاتون کو مارنے کے بعد فرار ہوگیا تھا ۔

      پولیس افسر نے بتایا کہ ثنا نامی خاتون کراچی کے گلستان جوہر بلاک 17 میں واقع نعمان گرینڈ سٹی میں ایک اپارٹمنٹ کی عمارت میں ملازمہ کے طور پر کام کرتی ہے۔ 5 اگست کو اس نے اپنے بیٹے سہیل کو کھانا پہنچانے کو کہا تھا۔ جب اس کا بیٹا اپارٹمنٹ کے احاطے میں داخل ہونے کی کوشش کر رہا تھا تو یونین کے عہدیداران عبدالناصر، عادل خان اور محمود خلیل نے اس کو اندر جانے سے روک دیا۔

       

      یہ بھی پڑھئے: مشرقی افغانستان میں بم دھماکہ، مارا گیا تحریک طالبان پاکستان کا ٹاپ کمانڈر


      اس کے بعد ثنا نیچے اتر کرآئی اور اس نے روکنے کی وجہ پوچھی تو عادل خان کو غصہ آگیا اور اس نے گالیاں دینی شروع کردیں۔ شکایت میں خاتون نے بتایا کہ عادل نے سیکورٹی گارڈ سے مجھے مارنے کیلئے کہا، جس پر گارڈ نے مجھے تھپڑ مارا اور جب میں زمین پر گرگئی تو میرے منہ پر لات ماری گئی۔ اس کے بعد میں بے ہوش ہو گئی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: یو اے ای کی شہزادی نےغزہ پٹی پر اسرائیلی فضائی حملوں کے خلاف اٹھائی آواز!


      پولیس نے کئی دفعات کے تحت فوجداری مقدمہ درج کرلیا ہے۔ ادھر وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے معاملہ کا نوٹس لیتے ہوئے گارڈ کے خلاف کارروائی کی ہدایت دی ہے۔ انہوں نے سوال کیا کہ سیکورٹی گارڈ میں اتنی جرات کیسے ہوگئی کہ وہ خاتون پر ہاتھ اٹھا کر تشدد کا نشانہ بنائے ۔ پولیس نے معاملہ کی تفتیش شروع کر دی ہے اور گارڈ کو حراست میں لے لیا ہے۔

      میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان میں جون کے مہینے میں مجموعی طور پر 157 خواتین کا اغوا کیا گیا۔ اس کے ساتھ ہی 112 خواتین کو جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور 91 خواتین کی عصمت دری کی گئی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: