ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان : 19 سالہ بہن چیختی رہی ، "مجھے بچا لو بھائی" ، شک میں دوست سے ہی کروادی ایسی گھنونی حرکت

پولیس کا کہنا ہے کہ ہماری کوشش لڑکی کو قتل کرنے والے دونوں ملزموں کو سخت سے سخت سزا دلانے کی ہے ۔

  • Share this:
پاکستان : 19 سالہ بہن چیختی رہی ،
علامتی تصویر

پاکستان میں 19 سالہ طالبہ اپنے ہی بھائی کے ہاتھوں قتل کروادی گئی ۔ ایک نجی ٹی وی پروگرام میں بتایا گیا ہے کہ احمد نام کے ایک لڑنے نے عزت نفس کے نام پر اپنی بہن کا قتل کروادیا ۔ بھائی نے اپنی بہن کو مارنے کیلئے ایک دوست کی مدد لی اور 19 سال کی بہن کا قتل کروادیا ۔ میڈیا رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ مسکان کالج جانے والی طالبہ تھی اور اس کے بھائی کو بہن کے کیرکٹر پر شک تھا اور اسی شک کی بنا پر اس کا قتل کروادیا گیا ۔ جبکہ اپنی بہن کو مارنے والے بھائی نے کہا کہ میری بہن کے پیچھے لڑکے بھی آتے تھے ۔ اس پر میں نے اس کو منع کیا اور کہا کہ تم کالج نہیں جانا ، لیکن اس نے میری بات نہیں مانی اور میرے ساتھ بدتمیزی کی ۔ وہیں قتل کے دوسرے ملزم کا کہنا ہے کہ جب میں لڑکی کو مارنے گیا تو وہ اپنے بھائی کو آواز لگا کر چیختی رہی اور اس کا نام پکارتی رہی ۔ لیکن اس کو نہیں معلوم تھا کہ اس کے بھائی نے قاتل کو یہ راستہ دکھایا ہے ۔


ادھر پولیس کا کہنا ہے کہ ہماری کوشش لڑکی کو قتل کرنے والے دونوں ملزموں کو سخت سے سخت سزا دلانے کی ہے ۔ غور طلب ہے کہ پاکستان عزت نفس کے نام پر قتل کا یہ پہلا معاملہ نہیں ہے ۔ آئے دن اس طرح کے معاملات سامنے آتے رہے ہیں ۔ گزشتہ سال منڈی بہاوالدین میں سگے بھائی نے مبینہ طور پر عزت کے نام پر اپنی 17 سالہ بہن کا گلا گھونٹ کر قتل کردیا تھا ۔ جون میں ڈیرہ غازی اسماعیل خان میں عید الفطر کے دوران ایک مقامی سماجی کارکن اور شاعرہ کا مبینہ طور پر قتل کردیا گیا تھا ۔


20 مئی 2018 کو چکوال میں چار بھائیوں نے مبینہ طور پر عزت کے نام پر اپنی 50 سالہ ماں کا قتل کردیا تھا ۔ غور طلب ہے کہ 2017 میں پنجاب صوبہ کے ایک ضلع میں عزت کے نام پر اور گھریلو تنازع میں 41 خواتین کا قتل کردیا گیا تھا ۔ 2016 میں یہ تعداد 35 تھی ۔ 2013 میں 51 اور 2014 میں 36 تھی ۔

First published: May 25, 2020 04:16 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading