உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ضمانت کی توسیع کے لئے نواز شریف کی عرضی مسترد

    نواز شریف : فائل فوٹو

    نواز شریف : فائل فوٹو

    پاکستان کی عدالت عظمی نے نواز شریف کی عرضی مسترد کردی، جس میں انہوں نے طبی بنیادوں پر اپنی ضمانت میں توسیع کی درخواست کی تھی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      پاکستان کی عدالت عظمی نے نواز شریف کی عرضی مسترد کردی، جس میں انہوں نے طبی بنیادوں پر اپنی ضمانت میں توسیع کی درخواست کی تھی۔  نیوز انٹرنیشنل کی رپورٹ کے مطابق نواز شریف کو طبی بنیاد پر دی گئی چھ ہفتے کی ضمانت کی مدت 7 مئی کو ختم ہورہی ہے۔ نواز شریف کو عدالت عظمی نے 26 مارچ کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا تھا اور انہيں ضمانت کی مدت ختم ہونے پر عدالت کے سامنے خود سپردگی کرنے کی ہدایت دی تھی۔
      سپریم کورٹ کے چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی زیر صدارت سہ رکنی بنچ نے نواز شریف کے وکیل کے ذریعہ دائر کی گئی عرضی پر سماعت کی۔ جیو نیوز کے مطابق عدالت عظمی نے نواز شریف کو علاج کے لئےبیرون ملک کا سفر کرنے کی اجازت دینے سے انکار کیا۔
      واضح رہے کہ پاکستان کے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف سات سال قید کی سزا کاٹ رہے ہيں، جن کو احتساب عدالت نے العزیزیہ مقدمہ میں اس سال کے آغاز میں قصوروار قرار دیا تھا۔
      عدالت میں سماعت کے دوران نواز شریف کے وکلی خواجہ حارث نے سہ رکنی بنچ کو اپنے مؤکل کی طبی حالت سے واقف کرایا، تاہم، وہ ضمانت میں توسیع کے لئے عدالت کو رضامند کرنے سے قاصر رہے۔
      First published: