کشمیر مسئلے کو آئی سی جے میں لے جائیں گے: شاہ محمود قریشی

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (يو این ایس سی ) میں منہ کی کھانے کے باوجود پاکستان نے کشمیر کا راگ الاپنا بند نہیں کیا ہے۔ پاکستان نے کہا ہے کہ وہ کشمیر مسئلے کو اب عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے ) میں لے جائے گا۔

Aug 21, 2019 12:30 PM IST | Updated on: Aug 21, 2019 12:30 PM IST
کشمیر مسئلے کو آئی سی جے میں لے جائیں گے: شاہ محمود قریشی

شاہ محمود قریشی نےاعلان کیا ہے کہ پاکستان کشمیرموضوع کوبین الاقوامی عدالت میں لےجائےگا۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل (يو این ایس سی ) میں منہ کی کھانے کے باوجود پاکستان نے کشمیر کا راگ الاپنا بند نہیں کیا ہے۔ پاکستان نے کہا ہے کہ وہ کشمیر مسئلے کو اب عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے ) میں لے جائے گا۔ ہندوستان کے 5 اگست کو جموں و کشمیر کے خصوصی ریاست کا درجہ منسوخ کرنے اور اس کا دو حصوں میں تقسیم کر کے لداخ اور جموں و کشمیر کے طور پر دو مرکز کے زیر انتظام ریاستیں بنانے سے پاکستان پوری طرح بوکھلایا ہوا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان کے مشیر برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے منگل کو کہا تھا کہ کشمیر کے مسئلے کو پاکستان دنیا کے ہر ایک پلیٹ فارم پر اٹھائے گا۔

آئی سی جے میں کشمیر مسئلے کو لے جانے کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے منگل کو تصدیق کی ہے ۔ انہوں نے ایک پرائیوٹ ٹیلی ویژن چینل سے بات چیت میں کہا کہ یہ فیصلہ تمام قانونی امور پر تبادلہ خیال کے بعد لیا گیا ۔ وزیر خارجہ نے کہا وزارت قانون اس پر کام کر رہی ہے اور جلد ہی تفصیلات کو عام کیا جائے گا ۔ قریشی نے کہا کہ پاکستان کے پاس ہندوستان کے خلاف مضبوط قانونی معاملہ ہے ۔

ادھر ڈاکٹر اعوان نے کہا کہ وزیر اعظم کی صدارت میں کابینہ کی میٹنگ ہوئی اور اس میں آئی سی جے میں کشمیر مسئلے کو لے جانے کے لئے خان نے منظوری دی ہے ۔ مشیر اعوان نے آئی سی جے میں اس معاملے کو اٹھائے جانے والے کچھ مسائل کے متعلق اشارے بھی دیے ۔ ڈاکٹر اعوان نے بتایا کہ آئی سی جے میں پاکستان کی ترجیح ’ ہندوستانی زیر انتظام کشمیر میں انسانی حقوق اور قتل عام‘ رہے گی ۔ پاکستان آئی سی جے میں اپنا موقف مؤثر طریقے سے رکھنے کے لئے عالمی شہرت یافتہ وکلاء کی خدمات لےگا۔

Loading...

Loading...