’پاکستانی فوج انتخابی ڈیوٹی کے لیے دستیاب نہیں ‘،پاک وزارت دفاع کا الیکشن کمیشن کو جواب

’پاکستانی فوج انتخابی ڈیوٹی کے لیے دستیاب نہیں ‘،پاک وزارت دفاع کا الیکشن کمیشن کو جواب (علامتی تصویر)

’پاکستانی فوج انتخابی ڈیوٹی کے لیے دستیاب نہیں ‘،پاک وزارت دفاع کا الیکشن کمیشن کو جواب (علامتی تصویر)

ای سی پی کے پریس اعلامیہ میں کہا گیا ہے، وزارت دفاع کے عہدیداروں نے کہا کہ فوج اپنے بنیادی فرائض کو اہمیت دیتی ہے

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Islamabad
  • Share this:
    پاکستان کے وزارت دفاع نے منگل کو الیکشن کمیشن کو اطلاع دی ہے کہ ملک  میں بگڑتی سلامتی صورتحال کے پیش نظر آئندہ صوبائی انتخابات کے دوران ملک کی فوج الیکشن ڈیوٹی کے لیے دستیاب نہیں ہوگی۔ پنجاب صوبہ میں 30 اپریل کو الیکشن ہونے ہیں، جب کہ خیبرپختونخواہ کے گورنر نے 28 مئی کو صوبہ میں الیکشن کرانے کی تجویز دی ہے۔

    چیف الیکشن کمشنر( سی ای سی) سکندر سلطان راجا کی صدارت میں ہوئی میٹنگ میں سکریٹری دفاع لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) حمود الزماں خان نے اپنی وزارت کی ایک ٹیم کی قیادت کی۔ پاکستان کے الکشن کمیشن (ای سی پی) نے ایک پریس اعلامیہ میں کہا کہ سکریٹری دفاع زماں خان نے ایڈیشنل سکریٹری میجر جنرل خرم سرفراز خان کے ساتھ سی ای سی اور ای سی پی عہدیداروں کو ملک کی موجودہ صورتحال اور فوج کی تعیناتی کے بارے میں اطلاع دی۔

    ای سی پی کے پریس اعلامیہ  میں کہا گیا ہے، وزارت دفاع کے عہدیداروں نے کہا کہ فوج اپنے بنیادی فرائض کو اہمیت دیتی ہے، جس میں سرحدوں اور ملک کی سلامتی  اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں موجودہ صورتحال کی وجہ سے فوج اس وقت انتخابی ڈیوٹی کے لیے دستیاب نہیں ہوگی۔ سکریٹری دفاع نے یہ بھی کہا کہ آخر میں، یہ حکومت کا فیصلہ ہوگا کہ وہ فوج کو اپنی ترجیحی کاموں تک ہی محدود رکھنا چاہتی ہے یا اسے الیکشن سے متعلق فرائض جیسے دوسرے کاموں کے لیے تقرر کرنا چاہتی ہے۔

    یہ بھی پڑھیں:

    ’عمران خان پرہمیں بھروسہ نہیں، وہ پاک فوج کیلئےایک خطرہ ہے‘ فوجی قیادت کانیوز18 سےاظہار..!

    یہ بھی پڑھیں:

    امریکی فوج کا دعویٰ-بحر اسود میں امریکی ڈرون سے ٹکرایا روسی جیٹ، روس نے کہی یہ بات

    بیان کے مطابق انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ الیکشن ڈیوٹی کی صورت میں فوج کو کوئیک ری ایکشن فورس موڈ میں تعینات کیا جا سکتا ہے تاہم اسٹیٹک موڈ میں ڈیوٹی کرنا ممکن نہیں۔ وزارت دفاع کے حکام نے کہا کہ ملک کی موجودہ اقتصادی حالت فوج پر بھی اثر انداز ہو رہی ہے۔ فوج کے جوان روایتی طور پر انتخابات کے دوران امن برقرار رکھنے میں کلیدی کردار ادا کرتے رہے ہیں۔
    Published by:Shaik Khaleel Farhaad
    First published: