உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پیرس حملے پر جنگجووں نےخرچ کئے محض 7500 ڈالر

    لندن۔  جن جنگجووں نے پیرس میں حملے کرکے اپنے ساتھ 130 لوگوں کی جان لی جس کی وجہ سے شام پر بموں کی بارش کردی گئی اور ساری دنیا میں خطرہ محسوس کیا جانےلگا اس پر ان کا غالباً ساڑھے سات ہزار ڈالر خرچ آیا ہوگا۔

    لندن۔ جن جنگجووں نے پیرس میں حملے کرکے اپنے ساتھ 130 لوگوں کی جان لی جس کی وجہ سے شام پر بموں کی بارش کردی گئی اور ساری دنیا میں خطرہ محسوس کیا جانےلگا اس پر ان کا غالباً ساڑھے سات ہزار ڈالر خرچ آیا ہوگا۔

    لندن۔ جن جنگجووں نے پیرس میں حملے کرکے اپنے ساتھ 130 لوگوں کی جان لی جس کی وجہ سے شام پر بموں کی بارش کردی گئی اور ساری دنیا میں خطرہ محسوس کیا جانےلگا اس پر ان کا غالباً ساڑھے سات ہزار ڈالر خرچ آیا ہوگا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      لندن۔  جن جنگجووں نے پیرس میں حملے کرکے اپنے ساتھ 130 لوگوں کی جان لی جس کی وجہ سے شام پر بموں کی بارش کردی گئی اور ساری دنیا میں خطرہ محسوس کیا جانےلگا اس پر ان کا غالباً ساڑھے سات ہزار ڈالر خرچ آیا ہوگا۔ اسلامی مملکت (داعش) نے عراق اور شام پر فضائی حملوں کا انتقام لینے کے لئے 13 نومبر کو پیرس میں دھماکے کئے تھے جس کے بعد سے عالمی لیڈران یہ کوشش کررہے ہیں کہ دہشت گردوں کو ملنے والا پیسہ کسی طرح روکا جائے لیکن حقیقت یہ ہے کہ اس طرح کے خودکش حملے کرنے پر پیسہ بہت زیادہ خرچ نہیں ہوتا۔


      فرانس اوربیلجیئم نے اضافی حفاظتی بندوبست پر چند روز کے اندر ایک ارب یورو خرچ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ مگر اس کے برعکس یہ حملے کرنے پر زیادہ خرچ نہیں آتا انہیں محض بندوقیں، گولیاں ۔ گھر میں بنی خودکش جیکیٹیں، کرائے کی گاڑیاں ، کرائے کے مکان پر ہی خرچ کرنے ہوتے تھے۔ اس سے اندازہ ہوتا ہے کی حملہ آوروں کو اندھا دھند طریقہ سے لوگوں کو مارنے اور خوف و بے چینی پھیلانے پر نسبتاً بہت کم خرچ کرنا پڑتا ہے۔


      آزاد 9/11 کمیشن کےمطابق نیویارک اور واشنگٹن میں 11 ستمبر کےحملوں پر 4 سےپانچ لاکھ ڈالر خرچ آیا ہوگا۔ اس رقم میں ہوائی جہاز اغوا کرنے کے لئے پائلٹوں کی تربیت ، جہاز کے ٹکٹ اور جہاز اڑانے کی تربیت او ر تیاری اور قیام کے اخراجات شامل کئےگئے ہیں۔
      مگر رائٹر کے ایک نمائندے نے اندازہ لگایا ہے جمعہ کےشام پیرس کےشراب خانوں ، ہوٹلوں اور فٹبال اسٹیڈیم اور کنٹسرٹ ہال میں لوگوں کو مارنےپر اس کا دو فی صد ہی لاگت آئی ہوگی۔ اصل ہتھیار خودکش جیکٹس تھیں جن کو کوئی بم ساز گھر میں تیار کر لیتا ہوگا اس کا خرچ بہت کم آتا ہے۔  پیرس پر حملہ کرنے والے ساتوں افراد نے خودکش جیکٹس پہن رکھی تھیں جن میں ٹی آر ٹی آر دھماکہ خیز مادہ بیٹری اور دھماکہ کرنےوالا بٹن لگاہوا تھا۔


      ٹی اے ٹی پی مادے کو ’’مادر شیطان‘‘ کہا جاتا ہے اسے عام طور سے دستیاب مادوں سے تیار کیا جا سکتا ہے جو گھروں میں بھی مل جاتے ہیں یا پھر کچھ کیمیائی مادے جو دوا کی دوکانوں پر دستہیاب ہوتے ہیں چند روپوں میں حاصل کرلئے جاتے ہیں۔ اندازہ ہے کہ ان بیلٹوں پر 5 یا 10 یورو لاگت آتی ہوگی اس کے علاوہ اس میں پیچ اور کیلیں بھری جاتی ہیں جن پر 150 یورو خرچ ہوتے ہونگے۔ اس کے علاوہ 89 حملہ آوروں نے پیرس میں چند روز کے لئے مکان کرائے پر لئے تھے جن پر تقریباً 680 یورو خرچ آتاہوگا۔ اس کے علاوہ جو کاریں کرائے پر لی گیئں ان پر 595 یورو خرچ آیا ہوگا۔ ایک کلاشنکوف 300 سے 700 یورو میں حاصل کی جا سکتی ہے۔ گولیاں 500 یورو میں 2000 مل جاتی ہیں ، تین چار بندوقوں کی قیمت 5400 یورو رہی ہوگی۔


      اس کے علاوہ سفر کے اخراجات ہوئے ہونگے ترکی سے مقدونیہ کی سرحد تک کے سمندری سفر پر 1200 یورو خرچ آیا ہوگا ۔ جعلی دستاویزات کی قیمت شامل نہیں کی گئی ہے اگر اسے بھی شامل کرلیا جائے تو لاگت 5000 یورو مزید بڑھ جائے گی۔

      First published: