ہوم » نیوز » عالمی منظر

پرویزمشرف نےعمران خان کا بچاو کرتے ہوئے کہا 'مودی کے دل میں کوئی جذبہ نہیں'۔

پرویزمشرف نے الزام لگایا کہ ہندوستان کے وزیراعظم نریندرمودی کے دل میں پلوامہ حملے میں شہید ہوئے جوانوں کے تئیں کوئی جذبہ نہیں ہے۔

  • Share this:
پرویزمشرف نےعمران خان کا بچاو کرتے ہوئے کہا 'مودی کے دل میں کوئی جذبہ نہیں'۔
پاکستان کے سابق صدر پرویز مشرف: فائل فوٹو

پلوامہ حملے پرپاکستان کے سابق صدرجنرل پرویز مشرف نے بدھ کوعمران خان کوحمایت دی۔ انہوں نے کہا کہ اس حملے سے پاکستان کا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ مشرف نےالزام لگایا کہ ہندوستان کے وزیراعظم نریندرمودی کے دل میں پلوامہ حملے میں شہید ہوئے جوانوں کے تئیں کوئی جذبہ نہیں ہے۔


واضح رہے کہ جموں وکشمیرکےپلوامہ میں سی آرپی ایف کے قافلے پرہوئےخود کش حملے میں 40 جوانوں کی جان گئی تھی۔ پاکستان سے چل رہے دہشت گرد تنظیم جیش محمد نےاس حملےکی ذمہ داری لی ہے۔ اس حملےکولےکرپاکستان کوپوری دنیا میں تنقید کا سامنا کررہا ہے۔


پرویزمشرف نےانگریزی نیوزچینل 'انڈیا ٹوڈے' سے بات چیت میں کہا کہ پلوامہ حملے میں مارے گئے جوانوں کولے کروزیراعظم نریندرمودی کے دل میں کوئی جذبہ نہیں ہے۔ انہوں نے وزیراعظم مودی پرحملہ کرتے ہوئے کہا 'مودی کے دل میں ان لوگوں کےلئےکوئی جگہ نہیں ہے۔ اگرہوتی تووہ پہلے کشمیرکا مسئلہ سلجھاتے'۔


انہوں نے مزید کہا 'یہ (پلوامہ حملہ) کافی مایوس کن ہے، اس میں کوئی شک نہیں ہے۔ جیش محمد کے سرغنہ مسعود اظہرکے تئیں میرے دل میں کوئی ہمدردی نہیں ہے، اس نے مجھے بھی مارنے کی کوشش کی ہے، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ پاکستان حکومت اس میں شامل ہے۔ مجھے نہیں لگتا کہ عمران خان کے دل میں جیش محمد کے تئیں کسی طرح کی ہمدردی ہے'۔

پرویزمشرف نے ہندوستان پرپاکستان کی تقسیم کا الزام لگایا۔ انہوں نے کہا 'یہ مت کہئے کہ ہم ہندوستان کے معاملوں میں دخل دیتے ہیں۔ کیا آپ پاکستان میں دخل نہیں دیتے؟ آپ نے پاکستان کودوحصوں میں تقسیم کرنے میں مدد کیوں کی؟ کیا آپ نے مشرقی پاکستان میں مداخلت نہیں کی؟ آپ فرانس اورامریکہ کے ساتھ مل کرپاکستان کو بلیک لسٹ کرانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ایسا کرنا بند کیجئے'۔
First published: Feb 20, 2019 09:55 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading