جموں وکشمیر: پرویز مشرف نے سیاست میں لوٹتے ہی اٹھایا کشمیرکا مسئلہ، کہہ دی یہ بڑی بات

پرویزمشرف مارچ 2016 سے ہی دبئی میں رہ رہے ہیں۔ ان کےاوپر2007 میں آئین کو معطل کرنے کے لئےملک سے غداری کا کیس چل رہا ہے۔

Oct 08, 2019 10:38 PM IST | Updated on: Oct 08, 2019 10:38 PM IST
جموں وکشمیر: پرویز مشرف نے سیاست میں لوٹتے ہی اٹھایا کشمیرکا مسئلہ، کہہ دی یہ بڑی بات

پرویز مشرف نے سیاست میں لوٹتےہی اٹھایا کشمیرکا مسئلہ

اسلام آباد: سرگرم سیاست میں واپسی کے بعد پیرکو پاکستان کے سابق فوجی سربراہ  پرویز مشرف نےسب سے پہلےکشمیرپربات کی۔ انہوں نےکہا 'کشمیر، پاکستان کے خون میں ہے'۔ ریٹائرڈ جنرل پرویزمشرف نےکارگل جنگ کا ذکربھی کیا۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ہندوستان باربارپاکستان کو اسلام آباد کی طرف سے امن کی بات کئے جانےکےباوجود دھمکی دے رہا ہے۔ واضح رہے کہ پرویزمشرف فی الحال دبئی میں مقیم ہیں۔

آل پاکستان مسلم لیگ (اے پی ایم ایل) کے76 سال کے چیئرمین پرویزمشرف نےاتوارکودبئی سےفون پرہی اپنےحامیوں کوخطاب کیا۔ اس دوران انہوں نےکشمیرسے متعلق باتیں کہیں۔ اپنی خراب صحت کے سبب پاکستانی لیڈرپرویز مشرف نے سرگرم سیاست سے بریک لیا تھا، لیکن وہ ایک بارپھرسرگرم سیاست میں لوٹ رہے ہیں۔ حالانکہ پاکستان میں ان پرمختلف کیس بھی چل رہے ہیں۔

Loading...

ہندوستان کی مرکزی حکومت کے ذریعہ جموں وکشمیرکے خصوصی ریاست کا درجہ ختم کئےجانے کے بعد سے یہ پرویزمشرف کا  کشمیرموضوع پر پہلا عوامی بیان ہے۔ انہوں نے کہا 'چاہے جوہوجائے، ہم اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑے رہیں گے'۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کے امن کی خواہش کواس کی کمزوری کے طورپرنہیں دیکھنا چاہئے۔

پرویز مشرف پرپاکستان میں چل رہے ہیں کئی کیس

پرویزمشرف مارچ 2016 سے ہی دبئی میں رہ رہے ہیں۔ ان کےاوپر2007 میں آئین کو معطل کرنےکےلئےملک سے غداری کا کیس چل رہا ہے۔ پاکستانی میڈیا میں آئی رپورٹس کے مطابق پرویزمشرف کی طبعیت میں سدھارآنےکےساتھ پرویزمشرف پاکستانی سیاست میں واپسی پرغورکررہے ہیں۔ اپنی خراب صحت کی رپورٹس کے بارے میں پرویزمشرف نےکہا کہ وہ ایمیلائیڈوسس نام کی بیماری سے جدوجہد کررہے ہیں اوردبئی میں اس کےلئے علاج کروا رہے ہیں۔ یہ ایک خطرناک بیماری ہے۔ پرویزمشرف 1998 سے 2008 تک پاکستان کے حکمراں رہے ہیں اورانہیں بے نظیربھٹوکے قتل اورلال مسجد کے امام کےقتل کے معاملے میں بھگوڑا بھی اعلان کیا جاچکا ہے۔

Loading...