உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مودی سوئٹزرلینڈ کے ساتھ کثیر الجہتی تعاون پر بات چیت کریں گے

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    جنیوا۔ وزیر اعظم نریندر مودی پانچ ممالک کے دورے کے تیسرے پڑاؤ میں آج سوئٹزرلینڈ پہنچ گئے، جہاں وہ آج دو طرفہ اور کثیر الجہتی تعاون کو بہتر کرنے کے لئے ملک کے صدر جوہان شنائیڈر امان کے ساتھ مذاکرات کریں گے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      جنیوا۔ وزیر اعظم نریندر مودی پانچ ممالک کے دورے کے تیسرے پڑاؤ میں آج سوئٹزرلینڈ پہنچ گئے، جہاں وہ آج دو طرفہ اور کثیر الجہتی تعاون کو بہتر کرنے کے لئے ملک کے صدر جوہان شنائیڈر امان کے ساتھ مذاکرات کریں گے۔ مسٹر مودی 48 رکنی جوہری سپلائر گروپ میں ہندوستان کی رکنیت اور سوئس بینکوں میں جمع کالے دھن کا پتہ لگانے کے لئے سوئٹزر لینڈ سے تعاون کی اپیل کر سکتے ہیں۔ سوئٹزرلینڈ جوہری سپلائر گروپ کا اہم رکن ہے۔


      میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے خارجہ سکریٹری ایس جے شنكر نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان ٹیکس ڈیٹا کے بارے میں اطلاعات کا تبادلہ کرنے کے معاملے میں سوئٹزرلینڈ کی جانب سے ہندوستان کو حمایت ملی ہے۔ جوہری سپلائر گروپ کے (این ایس جی) کے معاملے پر مسٹر جے شنكر نے کہا’’ہم اس مسئلے کو این ایس جی کے تمام اراکین کے سامنے اٹھا رہے ہیں اور سوئٹزرلینڈ این ایس جی کا ایک اہم رکن ہے۔ امید ہے کہ اس مسئلے پر ہمیں یقینی طور پر اس کی حمایت حاصل ہوگی ‘‘۔ مسٹر مودی اور مسٹر امان کے درمیان باہمی مفادات کے دو طرفہ، علاقائی اور کثیر الجہتی مسائل پر بات چیت ہوگی۔ اس کے علاوہ نمائندے سطح کی دو اور صنعت کاروں اور کاروباری سطح کی بھی بات چیت ہوگي ۔ ہندوستان اور سوئٹزرلینڈ کے درمیان دو طرفہ تجارت اور غیر ملکی سرمایہ کاری میں اضافہ سے دونوں ممالک کی معیشت مضبوط ہوگی۔ سوئٹزرلینڈ اور ہندوستان کے درمیان دو طرفہ تجارت 2004 میں 16 لاکھ ڈالر تھا جو 2011 میں 45 لاکھ ڈالر ہو گیا ہے۔


      مسٹر مودی یہاں ایک تجارتی کانفرنس میں شرکت کرنے کے ساتھ سي اي آراین میں کام کر نے والے ہندوستانی سائنسدانوں سے ملاقات کریں گے اور اس کے بعد امریکہ کے لئے روانہ ہو جائیں گے۔

      First published: