ہوم » نیوز » عالمی منظر

پاکستان میں پانچ لوگوں نے بکری کو بنایا اپنی ہوس کا شکار، جنگل میں لے جاکر کیا ریپ اور تڑپا۔ تڑپا کر چیر ڈالا۔۔۔

مالک کے مطابق بکری کو جانوروں کے اسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے ریپ کی تصدیق کی۔ تین ملزموں کی پہچان نعیم، ندیم، رب نواز کے طور پر ہوئی ہے دو ملزموں کی پہچان نہیں ہو پائی ہے۔ سبھی ملزم ابھی فی الحال فرار ہیں۔

  • Share this:
پاکستان میں پانچ لوگوں نے بکری کو بنایا اپنی ہوس کا شکار، جنگل میں لے جاکر کیا ریپ اور تڑپا۔ تڑپا کر چیر ڈالا۔۔۔
مالک کے مطابق بکری کو جانوروں کے اسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے ریپ کی تصدیق کی۔ تین ملزموں کی پہچان نعیم، ندیم، رب نواز کے طور پر ہوئی ہے دو ملزموں کی پہچان نہیں ہو پائی ہے۔ سبھی ملزم ابھی فی الحال فرار ہیں۔

پاکستان میں ایک بکری کے ساتھ ریپ کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ پنجاب صوبے کے اوکارا شہر میں پانچ لوگوں نے بکری کا ریپ کیا اور بعد میں اسے تڑپا تڑپا کر مار ڈالا۔ پولیس نے پانچوں لوگوں کے خلاف معاملہ درج کرکے جانچ شروع کر دی ہے۔

اس واقعے کے سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر لوگوں کا غصہ پھوٹا ہے۔ لوگ وزیر اعظم عمران خان کو ریپ کی واردات پر دئے ان کے بیان کو لیکر ٹرول کر رہے ہیں۔ بتادیں کہ عمران خان نے حال ہی میں کہا تھا کہ ریپ کے پیچھے کی وجہ چھوٹے کپڑے بھی ہیں۔ خواتین کے ایسے کپڑے جو مردوں کو اپنی جانب متوجہ کرتے ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق واقعہ چوبیس جولائی کا ہے۔ بکری کے مالک نے بتایا ہے کہ اس نے بکری کو 60 ہزار روپئے میں خریدا تھا۔ واردات والے دن بکری گھر کے باہر بندھی تھی۔ اسی درمیان پانچ لوگ اسے اٹھا لے گئے۔ کچھ کلو میٹر دور جنگلی علاقے میں بکری کی لاش ملی۔ اس کا گلا چیرا ہوا تھا۔

مالک کے مطابق بکری کو جانوروں کے اسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے ریپ کی تصدیق کی۔ تین ملزموں کی پہچان نعیم، ندیم، رب نواز کے طور پر ہوئی ہے دو ملزموں کی پہچان نہیں ہو پائی ہے۔ سبھی ملزم ابھی فی الحال فرار ہیں۔


پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 377 اور 429 کے تحت سبھی کے خلاف معاملہ درج کر لیا گیا ہے۔ پولیس پانچوں ملزموں کی گرفتاری کی کوشش کر رہی ہے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 31, 2021 11:21 PM IST