உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan Energy Crisis:پاکستان میں گہرایا بجلی بحران، پنجاب کی صوبائی حکومت توانائی بچت منصوبہ کرے گی لاگو

    پاکستان میں گہرایا بجلی کا بحران، حکومت کا ہے یہ منصوبہ۔

    پاکستان میں گہرایا بجلی کا بحران، حکومت کا ہے یہ منصوبہ۔

    Pakistan Energy Crisis: سندھ نے جمعہ کے روز اعلان کیا تھا کہ بجلی کی بچت کے لیے دودھ کی دکانوں، بیکریوں اور ڈیری کیریج گاڑیوں کے علاوہ صوبے میں تمام مارکیٹیں اور مالز رات 9 بجے تک بند رہیں گے۔ سندھ کے اس فیصلے کے بعد پنجاب میں بازار صبح سویرے کھلیں گے اور رات 9 بجے بند ہوں گے۔

    • Share this:
      Pakistan Energy Crisis: لاہور: پاکستان شدید بجلی بحران سے گزر رہا ہے۔ ایسے میں ملک کی حکومت نے بجلی بچانے کی کوششیں تیز کر دی ہیں۔ ملک بھر میں مسلسل لوڈ شیڈنگ کے باعث عوام کو جھلسا دینے والی گرمی سے بجلی سے چلنے والے آلات کا فائدہ نہیں مل رہا۔ اس کے علاوہ ملک بھر میں کئی اہم کام بھی بجلی کی قلت کے باعث وقت پر مکمل نہیں ہو رہے ہیں۔ مقامی میڈیا نے رپورٹ کیا کہ بجلی کے بحران کے درمیان، پنجاب کی صوبائی حکومت نے ہفتے کے روز دائمی صورتحال سے نمٹنے کے لیے توانائی کے تحفظ کی اسکیموں کو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

      پاکستان میں لوڈ شیڈنگ کی پریشانی
      ملک بھر میں مسلسل لوڈشیڈنگ کے باعث لوگوں کو شدید گرمی کا سامنا ہے۔ شہباز شریف حکومت نے توانائی بحران کا ذمہ دار اپنے پیشرو پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) اور اس کے سربراہ عمران خان کو ٹھہرایا ہے۔ ملک بھر میں بجلی کی طلب اور رسد کے درمیان فرق کو ختم کرنے کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ بجلی کے مسئلے پر سرکاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ کاروباری سرگرمیوں کے لیے صبح کا وقت استعمال کیا جائے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      British Airways Flights Cancellations:اسٹاف کی کمی سے برطانیہ کے ایئرپورٹس پر حالت خراب

      یہ بھی پڑھیں:
      China News:چین نے تیسرے بحری جنگی جہاز’فوجیان‘کوکیالانچ،خوبیاں جان کر آپ ہوجائیں گے حیران

      سندھ نے کیا اعلان
      سندھ نے جمعہ کے روز اعلان کیا تھا کہ بجلی کی بچت کے لیے دودھ کی دکانوں، بیکریوں اور ڈیری کیریج گاڑیوں کے علاوہ صوبے میں تمام مارکیٹیں اور مالز رات 9 بجے تک بند رہیں گے۔ سندھ کے اس فیصلے کے بعد پنجاب میں بازار صبح سویرے کھلیں گے اور رات 9 بجے بند ہوں گے تاکہ بجلی کی بچت، بجلی کی موجودہ بندش میں کمی اور ملک میں ایندھن کی قیمتوں میں اضافے کو کنٹرول کیا جا سکے۔ اس اصول میں دواخانوں، اسپتالوں، بیکریوں، ڈیریوں اور گیس اسٹیشنوں کو وقت کی پابندی سے چھوٹ دی جائے گی۔ یہی نہیں، اس کے علاوہ حکام جلد ہی ریستوراں اور ہوٹلوں کو بھی بند کرنے پر غور کر رہے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: