உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر اعطم مودی کی روس اور یوکرین سے فوراً جنگ روکنے کی اپیل، بات چیت اور ڈپلومیسی پر دیا زور

    وزیر اعطم مودی کی روس اور یوکرین سے فوراً جنگ روکنے کی اپیل

    وزیر اعطم مودی کی روس اور یوکرین سے فوراً جنگ روکنے کی اپیل

    وزیراعظم نریندر مودی (Prime Minister Narendra Modi) نے منگل کو یوکرین (Ukraine) میں جاری جنگ کو فوری طور پر روکنے کی اپیل کرتے ہوئے بحران کے حل کے لئے بات چیت اور ڈپلومیسی کے راستے پر لوٹنے کی ضرورت بتائی۔

    • Share this:
      کوپین ہیگن: وزیر اعظم نریندر مودی (Prime Minister Narendra Modi) نے منگل کو یوکرین (Ukraine) میں جاری جنگ کو فوراً روکنے کی اپیل کی اور بحران کے حل کے لئے بات چیت اور ڈپلومیسی کے راستے پر لوٹنے کی ضرورت بتائی۔ اس دوران ڈنمارک کی وزیرا عظم میٹے فریڈیرکسین نے امید ظاہر کی کہ ہندوستان جنگ کو ختم کرنے کے لئے روس پر اپنے اثر کا استمعمال کرے گا۔ مودی نے دوطرفہ بات چیت کے بعد یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ انہوں نے یوکرین کے بحران پر تبادلہ خیال کرنے اور یوکرین میں ’فوری جنگ بندی‘ کی اپیل کی۔

      وزیر اعظم مودی نے کہا، ’ہم نے یوکرین میں فوری جنگ بندی کرنے اور بحران کے حل کے لئے بات چیت اور ڈپلومیسی کے راستے پر لوٹنے کی اپیل کی‘۔ فریڈیرکسن نے امید ظاہر کی کہ ہندوستان روس پر اپنے اثر کا استعمال کرے گا۔ انہوں نے روس کے صدر ولادیمیر پتن سے ‘جنگ ختم کرنے اور لوگوں کا قتل کرنے‘ کو کہا۔ انہوں نے کہا، ‘میرا پیغام بہت واضح ہے کہ ولادیمیر پتن کو یہ جنگ روکنی ہوگی اور لوگوں کی جان لینا بند کرنا ہوگا۔ ظاہر طور پر مجھے امید ہے کہ ہندوستان اس بات چیت میں روس پر بھی دباو بنائے گا‘۔

      وزیر اعظم مودی منگل کو کوپین ہیگن پہنچے اور دو طرفہ تعلقات کو مزید بڑھانے کے لئے فریڈیرکسن کے ساتھ بات چیت کی۔ وفد سطح کی بات چیت بھی ہوئی اور کچھ معاہدے کے اشتہارات پر دستخط کئے گئے۔ نریندر مودی نے ایک بیان میں کہا کہ انہیں خوشی ہے کہ مختلف علاقوں میں ‘اہم ترقی‘ ہوئی ہیں۔ خاص طور پر توانائی، صحت، بندرگاہ، شپنگ، سرکلر معیشت اور پانی کا انتظام میں۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ہندوستان میں 200 سے زیادہ ڈینش کمپنیاں مختلف میدانوں میں کام کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا، ’ان کمپنیوں کو ہندوستان میں کاروبار کرنے میں آسانی ہو رہی ہے اور معاشی اصلاحات سے فائدہ ہو رہا ہے‘۔

      بیان کے مطابق، دونوں فریق نے گرین اسٹریٹجک پارٹنرشپ میں پیش رفت کا جائزہ لیا۔ انہوں نے مہارت کی ترقی، آب و ہوا، قابل تجدید توانائی، آرکٹک، پی 2 پی تعلقات اور دیگر مسائل کے شعبوں میں ہمارے وسیع تعاون پر بھی تبادلہ خیال کیا‘۔ وزیر اعظم مودی نے ڈنمارک کی راجدھانی پہنچنے کے بعد ایک ٹوئٹ میں کہا، ’میں گرمجوشی سے استقبال کے لئے وزیر اعظم فریڈرکسن کا بہت شکر گزار ہوں۔ یہ سفر ہبدوستان-ڈنمارک تعلقات کو مزید مضبوط کرنے میں ایک لمبا سفر طے کرے گی‘۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: