ہوم » نیوز » عالمی منظر

نیپال میں مودی کے پتلے کے ساتھ ہند مخالف مظاہرے

كٹھمنڈو۔ نیپال کے دارالحکومت کھٹمنڈو میں مظاہرین نے ہندوستان پر اقتصادی ناکہ بندی لگانے اور نیا آئین اپنائے جانے کے سلسلے میں نیپال کے اندرونی سیاست میں مداخلت کرنے کا الزام لگاتے ہوئے ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی کے پتلے کے ساتھ مظاہرہ کیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 29, 2015 07:47 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نیپال میں مودی کے پتلے کے ساتھ ہند مخالف مظاہرے
كٹھمنڈو۔ نیپال کے دارالحکومت کھٹمنڈو میں مظاہرین نے ہندوستان پر اقتصادی ناکہ بندی لگانے اور نیا آئین اپنائے جانے کے سلسلے میں نیپال کے اندرونی سیاست میں مداخلت کرنے کا الزام لگاتے ہوئے ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی کے پتلے کے ساتھ مظاہرہ کیا۔

كٹھمنڈو۔  نیپال کے دارالحکومت کھٹمنڈو میں مظاہرین نے ہندوستان پر اقتصادی ناکہ بندی لگانے اور نیا آئین اپنائے جانے کے سلسلے میں نیپال کے اندرونی سیاست میں مداخلت کرنے کا الزام لگاتے ہوئے ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی کے پتلے کے ساتھ مظاہرہ کیا۔


مظاہرین نے مسٹر مودی کے پتلے کے ساتھ احتجاج کیا اور ہند مخالف نعرے لگائے۔ پولیس نے کچھ دیر بعد انہیں منتشر کر دیا۔ اس کے بعد 130 مظاہرین کے دوسرے گروپ نے کھٹمنڈو میں واقع ہندوستانی سفارت خانے تک مورچہ نکالا اور ہند کے خلاف ناراضگی ظاہر کی۔


تاہم ہندوستانی وزارت خارجہ کے نمائندے نے اس سلسلے میں ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔ نیپال کے سب سے بڑے تجارتی پارٹنر ہندوستان نے اقتصادی ناکہ بندی کے الزامات سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ مظاہرین نے سڑکیں جام کر رکھی ہیں جس کی وجہ سے اس کے کارگو ٹرک نیپال کی سرحد میں نہیں جا پا رہے ہیں۔ ہندوستانی سرحد میں کھانے کی چیزیں اور ایندھن سے لدے سینکڑوں ٹرک کھڑے ہیں لیکن سڑکوں پر مظاہرین کے ڈٹے ہونے کی وجہ سے وہ آگے نہیں جا پا رہے ہیں۔


نیپال میں گزشتہ ہفتے نیا آئین نافذ ہوجانے کے بعد دونوں ممالک کے درمیان تلخی پیدا ہو گئی ہے۔ نئے آئین کی دفعات پر جنوبی حصے میں رہ رہے اقلیتی فرقوں نے عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ اس کی مخالفت میں ہوئی تحریک کے دوران 40 سے زائد افراد ہلاک ہو گئے ہیں اور بہت سے دیگر زخمی ہوئے ہیں۔

کارگو ٹرکوں کے نہ پہنچ پانے کی وجہ سے کھٹمنڈو میں کل سے ایندھن کی فروخت کا کوٹہ مخصوص کر دیا گیا۔ اس کی وجہ سے سڑکوں پر آج انتہائی کم گاڑی نظر آئی۔

First published: Sep 29, 2015 07:46 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading