پلوامہ کے فدائین دہشت گردوں کو افغان جنگ اسپیشلسٹ نے دی تھی ٹریننگ، دسمبرمیں کی تھی دراندازی

خفیہ ذرائع کے مطابق گزشتہ ماہ پونچھ کے راستے تقریباً 15جیش محمد کے دہشت گردوں نے ملک میں دراندازی کی تھی۔

Feb 17, 2019 09:28 AM IST | Updated on: Feb 17, 2019 09:54 AM IST
پلوامہ کے فدائین دہشت گردوں کو افغان جنگ اسپیشلسٹ نے دی تھی ٹریننگ، دسمبرمیں کی تھی دراندازی

پلوامہ کے دہشت گردانہ حملے میں 40 جوان شہید ہوگئے۔

پاکستان سے چلائی جارہی دہشت گرد تنظیم جیش محمد کی طرف سے کئے گئے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے ماسٹرمائنڈ غازی راشد اورکامران کہے جارہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق دونوں جیش محمد کے کمانڈرہیں اوران کی ٹریننگ کے بعد ہی خودکش حملے کوانجام دیا گیا، جس کے سبب 40 سی آرپی ایف جوانوں کو شہادت ملی۔

خفیہ ذرائع کےمطابق گزشتہ ماہ پونچھ کے راستے تقریباً 15 جیش محمد کے دہشت گردوں نے ملک میں دراندازی کی تھی۔ ان دہشت گردوں میں کامران بھی شامل تھا، جومبینہ طورپرمقامی نوجوانوں کوٹریننگ دینے کے لئے سامان اوردیگردھماکہ خیزاشیا لے کرپہنچا تھا۔

Loading...

وہیں دوسری طرف 28 سالہ دہشت گرد راشد دوماہ پہلے کپواڑہ کے راستے ہندوستان میں داخل ہوا تھا۔ ذرائع کا ماننا ہے کہ رشید ایک افغان جنگ میں اہم کردارنبھا چکا ہے۔ راشد کو پاکستان فوج کے اسپیشل سروس گروپ کے ذریعہ ٹریننگ ملی تھی۔ پاکستان کی یہ تنظیم سرحد پارسے ہونے والے آپریشن اورایل اوسی کے پارزبردست نظررکھتا ہے۔ ذرائع نےکہا کہ راشد پاکستان کے شمال مغربی علاقوں میں لڑائی لڑچکا ہے۔

افغان جنگ میں جنگجورہا غازی راشد آئی ای ڈی ایکسپرٹ بتایاجاتا ہے۔ مانا جارہا ہے کہ غازی نے اپنےدوساتھیوں کے ساتھ دسمبرمیں ہندوستان میں دراندازی کی تھی اورجنوبی کشمیرمیں چھپ گیا۔ انٹلی جنس ایجنسیوں کے مطابق جیش نے پاکستانی کمانڈرراشد کو کشمیر میں حملہ کرنے کوکہا تھا۔ حالانکہ جیش یہ بھی چاہتا تھا کہ اس حملے میں مقامی نوجوانوں کا استعمال کیا جائے۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال کشمیرمیں دہشت گردی کے راستے پربھٹکے کئی نوجوان 'آپریشن آل آوٹ' کے تحت مارے جاچکے ہیں، ان میں جیش محمد سرغنہ دہشت گرد مسعود اظہرکی بہن کا بیٹا طلحہ اوربھائی کا بیٹا عثمان بھی شامل تھے۔ جنوبی کشمیرمیں فوج کے آپریشن میں دونوں کومارگرایا گیا تھا۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ پلوامہ حملے میں کشمیری نوجوان کا استعمال اس لئے کیا گیا، تاکہ اسے دیکھ کرباقی نوجوان بھی اس راستے پرچلنے کے لئے تیارہوسکیں۔ ساتھ ہی ہندوستان میں فدائین حملے کی شروعات بھی کرنا تھا۔

Loading...