اپنا ضلع منتخب کریں۔

    کریمیا اور روس کو ملانے والے کلیدی پل پر سیکیورٹی میں اضافہ، روسی صدر ولادیمیر پوتن کو کسی بڑے خطرہ کا ڈر

    روس کے صدر ولادیمیر پوتن

    روس کے صدر ولادیمیر پوتن

    یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلینسکی نے ایک ویڈیو خطاب میں کریمیا کے موسم کے بارے میں بات کرتے ہوئے بالواسطہ طور پر پل پر حملے کا اعتراف کیا لیکن اس کی وجہ نہیں بتائی۔ انہوں نے کہا کہ آج کا دن ہماری ریاست کی سرزمین پر ایک اچھا اور زیادہ تر دھوپ والا دن ہے۔ بدقسمتی سے کریمیا میں ابر آلود ہوا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • INTER, IndiaRussiaRussia
    • Share this:
      روسی صدر ولادیمیر پوتن نے ہفتے کے روز دیر گئے کرچ پل (Kerch Bridge) اور کریمیا اور روس کے درمیان توانائی کے بنیادی ڈھانچے کے لیے حفاظتی انتظامات سخت کرنے والے ایک حکم نامے پر دستخط کیے تھے۔ کریملن کے ایک بیان کے مطابق روس کی وفاقی سیکیورٹی سروس، ایف ایس بی، کو اس کوشش کا ذمہ دار بنایا گیا تھا۔ پوٹن کا یہ اقدام ہفتے کے روز ہونے والے ایک دھماکے کے بعد سامنے آیا ہے جس کے نتیجے میں جزیرہ نما کریمیا کو روس سے ملانے والے پل کے جزوی طور پر گرنے سے کریملن کی ناکام جنگی کوششوں کے لیے سپلائی کی ایک اہم پل کو نقصان پہنچا ہے۔

      یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلینسکی نے ایک ویڈیو خطاب میں کریمیا کے موسم کے بارے میں بات کرتے ہوئے بالواسطہ طور پر پل پر حملے کا اعتراف کیا لیکن اس کی وجہ نہیں بتائی۔ انہوں نے کہا کہ آج کا دن ہماری ریاست کی سرزمین پر ایک اچھا اور زیادہ تر دھوپ والا دن ہے۔ بدقسمتی سے کریمیا میں ابر آلود ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوکرین قابضین کے بغیر مستقبل امن چاہتا ہے۔ ہمارے پورے علاقے میں خاص طور پر کریمیا میں امن کی ضرورت ہے۔

      یوکرائنی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ آج صبح چھ بجے کے قریب پل پر دھماکہ ہوا۔ ساتھ ہی ایک سوشل میڈیا پوسٹ میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ یہ آگ اتنی بھیانک تھی کہ پل کا کچھ حصہ پانی میں گر گیا ہے۔ پل کو بری طرح نقصان پہنچا ہے۔ اسے پوتن حکومت کی علامتوں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق اس واقعے کے بعد سڑک اور ریل پل پر ٹریفک کی آمدورفت معطل ہو گئی ہے۔ اس پل کو 2018 میں کھولا گیا تھا اور اسے کریمیا کو روس کے ٹرانسپورٹ نیٹ ورک سے ملانے کے لیے ڈیزائن کیا گیا تھا۔ ایجنسی نے ایک علاقائی اہلکار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کریمین پل کے ایک حصے پر ایندھن کے ٹینک میں آگ بھڑک اٹھی جس سے پل پر لمبے لمبے آگ کے شعلے نظر آئے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: