உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    قطر کا شام میں فوجی مداخلت سے انکار

    دوحہ۔  قطر کے وزیر خارجہ خالد امام عطیہ نے شام میں اپنے فوجی بھیجنے سے انکار کیا ہے۔

    دوحہ۔ قطر کے وزیر خارجہ خالد امام عطیہ نے شام میں اپنے فوجی بھیجنے سے انکار کیا ہے۔

    دوحہ۔ قطر کے وزیر خارجہ خالد امام عطیہ نے شام میں اپنے فوجی بھیجنے سے انکار کیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      دوحہ۔  قطر کے وزیر خارجہ خالد امام عطیہ نے شام میں اپنے فوجی بھیجنے سے انکار کیا ہے۔ مسٹر عطیہ نے کہا کہ ہمارے فوجیوں کے شام جانے کا سوال نہیں ہے۔ وہ لوگ اپنے ملک کو خود ہی آزاد کروا سکتے ہیں۔


      انہوں نے کہا کہ اگر وہاں کے لوگ مالی مدد چاہتے ہیں تو ان کی مدد کی جائے گی۔ انہوں نے روس کی طرف سے صدر بشار الاسد کی حمایت میں فضائی حملے کے جواب میں ایک ہفتے پہلے کہا تھا کہ قطر بھی شام میں فوجی مداخلت کر سکتا ہے۔ اگرچہ قطر گزشتہ چار سال سے شام کے باغیوں کو ہتھیار فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ تربیت اور سیاسی طور پر حمایت کرتا رہا ہے لیکن گزشتہ ہفتے ایک انٹرویو میں مسٹر عطیہ نے براہ راست رول کے بارے میں تجویز پیش کی تھی۔


      واضح ر ہے کہ شام کے بحران کے سیاسی حل کے لئے آئندہ جمعہ کو ویانا میں ہونے والی میٹنگ میں امریکہ، روس، سعودی عرب، ایران اور قطر کے علاوہ کئی دیگر ممالک کے نمائندوں کے شامل ہونے کا امکان ہے۔

      First published: