உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جسمانی تعلقات بنانے کے بعد لڑکیوں میں آتی ہیں یہ تبدیلیاں، ضرور جاننی چاہئیں یہ باتیں: ریسرچ

    اس تحقیق میں تقریبا 300 خواتین کو شامل کیا گیا۔ تحقیق میں ان کے جسم میں ہونے والے ہارمونل تبدیلیوں کو مرکوز کیا گیا۔ اس تحقیق کے دوران محققین کو متعدد حیران کر دینے والی معلوماتحاصل ہوئیں ۔

    اس تحقیق میں تقریبا 300 خواتین کو شامل کیا گیا۔ تحقیق میں ان کے جسم میں ہونے والے ہارمونل تبدیلیوں کو مرکوز کیا گیا۔ اس تحقیق کے دوران محققین کو متعدد حیران کر دینے والی معلوماتحاصل ہوئیں ۔

    • Share this:
      اس تحقیق میں تقریبا 300 خواتین کو شامل کیا گیا۔ تحقیق میں ان کے جسم میں ہونے والے ہارمونل تبدیلیوں کو مرکوز کیا گیا۔ اس تحقیق کے دوران محققین کو متعدد حیران کر دینے والی معلوماتحاصل ہوئیں ۔

      بتادیں کہ آسٹریلیا کے ہیلتھ سینٹر نے جسمانی تعلقات بنانے کے بعد لڑکیوں کے اپنے پارٹنر کے ساتھ کئے جانے والے رویے کو لے کر ایک ریسرچ کی ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ سیکس کرنے کے بعد لڑکیوں میں کس قسم کی بدیلیاں آتی ہیں۔

      جسمانی تعلقات بنانےکے بعد رونے لگتی ہیں لڑکیاں: اکثر ہم نے دیکھا کہ خواتین اپنے پارٹنر کے ساتھ جسمانی تعلقات قائم کرنے کے بعد جذباتی ہو جاتی ہیں۔ دراصل اس کے پیچھے یہ وجہ ہے کہ تعلقات بنانے کے بعد خواتین میں ہائپوتھیلیمس میں ٹینشن کے احساسات پیدا ہوتے ہیں۔ جو  خواتین کو رلانے پر مجبور کر تے ہیں۔
      First published: