உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    معاشی بحران کی جانب بڑھ رہا Pakistan، ڈالر کے مقابلے پاک روپیے میں درج ہوئی ریکارڈ گراوٹ

    پاکستانی کرنسی۔ (فائل فوٹو)

    پاکستانی کرنسی۔ (فائل فوٹو)

    ڈالر کے مقابلے پاکستانی روپے کی گرتی ہوئی ساکھ ایسی ہے کہ مارچ 2022 میں ڈالر 7.76 پیسے مہنگا ہو گیا ہے۔ ساتھ ہی گزشتہ سال مارچ کے مقابلے میں اب تک پاکستانی ڈالر 27 روپے مہنگا ہو چکا ہے۔

    • Share this:
      اسلام آباد: سری لنکا جہاں ہندوستان کے پڑوس میں معاشی بحران میں گھرا ہوا ہے وہیں پڑوسی ملک پاکستان میں بھی سیاسی بحران کے ساتھ ساتھ مالی بحران بھی تیزی سے گہرا ہوتا جا رہا ہے۔ پاکستان میں سیاسی استحکام کا گراف نیچے جا رہا ہے، ڈالر کے مقابلے پاکستانی روپے کی ساکھ بھی پستی کی طرف جا رہی ہے۔ منگل کو کاروبار کے اختتام تک ڈالر کی قیمت 183.23 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی۔

      ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت پاکستان کے پہلے سے خستہ حال خزانے کے لیے بہت بری خبر ہے۔ کیونکہ اس کا سیدھا سیدھا مطلب ہے کہ پاکستان کو اپنی ضروریات مہنگے داموں درآمد کرنی پڑیں گی۔ یعنی کافی حد تک صورتحال سری لنکا کی طرح اسی راستے پر چل رہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Imran Khan نے ہر ہتھکنڈہ فیل ہونے پر کھیلا غیرملکی سازش کا داؤ، ایسے دی اپوزیشن کو شکست

      ذرائع کے مطابق اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے پاس آئندہ دو ماہ کے لیے صرف زرمبادلہ کے ذخائر رہ گئے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ پاکستان کے خزانے میں جہاں صرف 12 ارب ڈالر رہ گئے ہیں وہیں کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ بھی بڑھ رہا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی منڈی میں خام تیل کی قیمتیں زیادہ ہونے کی وجہ سے اسے درآمدات کے لیے بھی زیادہ خرچ کرنا پڑ رہا ہے۔ ماہرین کا خیال ہے کہ اگر یہ رفتار یہاں جاری رہی تو پاکستان میں ڈالر جلد 200 روپے کے قریب پہنچ سکتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Nawaz Sharif attacked: لندن میں سابق پاکستانی وزیراعظم نواز شریف پر حملہ، گارڈ زخمی

      ڈالر کے مقابلے پاکستانی روپے کی گرتی ہوئی ساکھ ایسی ہے کہ مارچ 2022 میں ڈالر 7.76 پیسے مہنگا ہو گیا ہے۔ ساتھ ہی گزشتہ سال مارچ کے مقابلے میں اب تک پاکستانی ڈالر 27 روپے مہنگا ہو چکا ہے۔ گزشتہ 5 سالوں میں پاکستانی روپیہ 103 روپے سے بڑھ کر 185 تک پہنچ گیا ہے۔ جو پاکستانی معیشت پر اعتماد کی کمی کو بھی ظاہر کرتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: