உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia-Ukraine War: مضبوط، محفوظ اور چوکنا رہیں، یوکرین میں ہندوستانی سفارت خانہ کا یوکرین میں پھنسے ہوئے ہندوستانیوں کیلئے پیغام

    زیلنسکی نے بتایا کہ کیف میں گھسے روسیوں کا پہلا نشانہ میں ہی ہوں۔

    زیلنسکی نے بتایا کہ کیف میں گھسے روسیوں کا پہلا نشانہ میں ہی ہوں۔

    اس وقت تقریباً 16,000 ہندوستانی یوکرین میں پھنسے ہوئے ہیں۔ سفارت خانے نے ہندوستانی شہریوں خاص طور پر چوپ-زاہونی اور پوربنے-اسٹریٹ بارڈر پوائنٹس کے قریب رہنے والے طلبا کو مشورہ دیا کہ وہ وزارت خارجہ کی ٹیموں کے ساتھ مل کر منظم طریقے سے روانہ ہو جائیں تاکہ اس اختیار کو عملی جامہ پہنایا جا سکے۔

    • Share this:
      یوکرین میں ہندوستانی سفارت خانے (Indian embassy in Ukraine) نے جمعہ کے روز پھنسے ہوئے ہندوستانیوں سے ’مضبوط، محفوظ اور چوکس‘ رہنے کی اپیل کی اور کہا کہ انہیں رومانیہ اور ہنگری کی سرحدی گزرگاہوں سے نکالنے کی کوششیں جاری ہیں۔ ایک ایڈوائزری میں سفارت خانے نے کہا کہ ہندوستانی ٹیمیں ہنگری کی سرحد پر Chop-Zahony بارڈر پوائنٹ کے ساتھ ساتھ Uzhhorod میں Chernivtsi کے ارد گرد رومانیہ کی سرحد ی علاقہ Porubne-Street پر تعینات ہیں۔

      ایڈوائزری میں سفارت خانے نے کہا کہ اس مشکل صورتحال میں ہندوستان کا سفارت خانہ ہندوستانیوں سے درخواست کرتا ہے کہ وہ مضبوط، محفوظ اور چوکنا رہیں۔ یوکرین میں ہندوستانی کمیونٹی کی مدد کے لیے سفارت خانہ بھی چوبیس گھنٹے کام کر رہا ہے۔ اس نے کہا کہ حکومت ہند اور سفارت خانہ رومانیہ اور ہنگری سے انخلا کے راستے قائم کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔

      اس وقت تقریباً 16,000 ہندوستانی یوکرین میں پھنسے ہوئے ہیں۔ سفارت خانے نے ہندوستانی شہریوں خاص طور پر چوپ-زاہونی اور پوربنے-اسٹریٹ بارڈر پوائنٹس کے قریب رہنے والے طلبا کو مشورہ دیا کہ وہ وزارت خارجہ کی ٹیموں کے ساتھ مل کر منظم طریقے سے روانہ ہو جائیں تاکہ اس اختیار کو عملی جامہ پہنایا جا سکے۔

      اس نے کہا گیا ہے کہ ایک بار جب اوپر والے راستے کام کر لیتے ہیں، تو نقل و حمل کے لیے اپنے انتظامات سے سفر کرنے والے ہندوستانی شہریوں کو مشورہ دیا جائے گا کہ وہ اوپر کی سرحدی چوکیوں پر جائیں اور سرحد کے ذریعے سہولت کے لیے متعلقہ چوکیوں پر قائم ہیلپ لائن نمبروں سے رابطے میں رہیں۔ مشن نے کہا کہ کنٹرول رومز قائم ہونے کے بعد رابطہ نمبرز شیئر کر دیے جائیں گے۔

      سفارت خانے نے طلبا کو منظم نقل و حرکت کے لیے طلبا کے ٹھیکیداروں سے رابطے میں رہنے کا مشورہ بھی دیا۔ اس نے ہندوستانی شہریوں سے کہا کہ وہ پاسپورٹ، نقد رقم، ترجیحی طور پر کسی بھی ہنگامی اخراجات کے لیے امریکی ڈالر میں لے جائیں اور اگر وہ دستیاب ہو تو کورونا ویکسینیشن سرٹیفکیٹ جیسے دیگر ضروری سامان اپنے ساتھ رکھیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: